مہنگائی میں کمی نہ آسکی،22اشیاء خوردونوش کی قیمتوں میں اضافہ ہوگیا

مہنگائی میں کمی نہ آسکی،22اشیاء خوردونوش کی قیمتوں میں اضافہ ہوگیا

  

ملتان (خصوصی رپورٹر) پاکستان میں مہنگائی کی فضا تھم نہ سکی ہے ، اشیائے خورونوش کی قیمتوں میں خود ساختہ اضافہ اور منافع کی شرح اضافہ ہونے سے شہریوں کے گھریلو بجٹ شدید متاثر ، وفاقی ادارہ شماریات نے بھی مہنگائی میں شرح میں 2.44 فیصد بارے رپورٹ جاری کردی ہے ۔ وفاقی ادارہ شماریات کیلئے 17 اربن شہروں میں 53 اشیاء کی قیمتوں کا جائزہ لیا گیا جس میں سے 22 اشیاء کی قیمتوں میں اضافہ ،10 (بقیہ نمبر30صفحہ7پر )

اشیاء کی قیمتوں میں کمی جبکہ 21 اشیاء کی قیمتوں میں استحکام رہا ہے ۔ ٹماٹر 69.13 روپے سے بڑھ کر 94.47 روپے، چکن زندہ 121.03 روپے سے بڑھ کر 134.45 روپے، آلو بڑھ کر 34.41 روپے، پٹرول 77.17 روپے، ادرک 187.71 روپے، ہائی سپیڈ ڈیزل 84.75 روپے، فارمی انڈہ 94.96 روپے، چائے 200 گرام 188.73 روپے، ایل پی جی سلنڈر 1070.12 روپے، دال ماش 236.52 روپے، کیروسین آئل 7=84.31 روپے، گوشت کی تیار پلیٹ 85.46 روپے، دال کی تیار پلیٹ 51.57 روپے، گندم 346 روپے، آگ جلانے والی لکڑی 589.92 روپے فی من ، مٹن بڑھ کر 623.71 روپے، بڑا گوشت ہڈی والا 315.95 روپے، دال اُرد دھلی ہوئی 122.45 روپے، مسٹر ڈ آئل 180.9 روپے ، 10 کلو گرام گندم کے آٹے کا تھیلا 395.78 روپے، تیار چائے 19.42 روپے، دال مسور 145.81 روپے فی کلوگرام ہو گئی ہیں۔جن اشیاء کی قیمتوں میں کمی ہوئی ہے ان میں گڑ، ویجی ٹیبل آئل، دال مونگ، چاول باسپتی ٹوٹا ، چینی ، کوکنگ آئل، چاول اری6 اور پیاز شامل ہیں۔ جن اشیاء کی قیمتوں میں استحکام رہا ہے ان میں بریڈ ، دوددھ، دہی، سمیت 21 اشیاء کی قیمتوں استحکام رہا ہے۔

مزید :

ملتان صفحہ آخر -