جہیز ایک لعنت ہے اور ہندوسامراج کا رواج ہے،مولانا جمال الدین

جہیز ایک لعنت ہے اور ہندوسامراج کا رواج ہے،مولانا جمال الدین

  

ملاکنڈایجنسی (نمائندہ خصوصی)جماعت اسلامی ملاکنڈ کے ضلعی آمیر مولانا جما ل الدین نے کہا ہے کہ جہیز ایک لعنت اور ہندو سامراج کا رواج ہے۔جہیز کی لعنت کی وجہ سے معاشرہ میں بے شمار بچیاں نکاح سے محروم ہورہی ہیں۔اسلام میں نکاح سب سے آسان کام ہے۔ مسلمانوں کا خاندانی نظام ایک رحمت ہے۔مغرب اس خاندانی نظام کو سبوتاژ کرنے کی کوششیں کررہا ہے۔ والدین کو اولڈ ہاؤسز میں منتقل کرنااور کتوں کو ائیر کنڈیشنڈ کمروں میں رکھنا یورپ اور مغرب کا مکروہ چہرہ بے نقاب کرتا ہے۔ ان خیالات کا اظہارانہوں نے ملاکنڈ،طوطہ میں اجتماعات اور پیر خیل میں صوبیدار مقبول کے بیٹے کے تقریب نکاح کے موقع پر ایک بڑے تقریب سے خطاب کرتے ہوئے کیا۔ اس موقع پر جماعت اسلامی کے ممبر ڈسٹرکٹ کونسل آمجد علی شاہ،ضلعی سیکرٹری اطلاعات خیرالرحمان،یوسی امیر ادریس باچہ،حجت خان اور دیگر رہنما وکارکنان کثیرتعداد میں موجود تھے۔انہوں نے کہا کہ نکاح سنت نبوی ﷺ ہے جو ایک عظیم نعمت ہے۔جس کے نتیجے میں دو خاندان ایک دوسرے کے ساتھ شیروشکر ہوجاتے ہیں اور معاشرہ فحاشی وعریانی اور بے راہ روی سے محفوظ ہوتا ہے۔ ہمیں اپنی خوشی اور غم کے مواقع پر شریعت محمدی ﷺ سے رہنمائی لینی چاہئیے۔غم کے موقع پر صبر جبکہ خوشی کے موقع پر شکر ادا کرنا چاہئیے۔اسلام ہی اس دنیا میں امن اور خوشحالی کا ضامن ہے اور اسلامی پاکستان ہی خوشحال پاکستان ہوگا۔جماعت اسلامی کے کارکن تحریک اسلامی کا عظیم سرمایہ ہے۔

مزید :

راولپنڈی صفحہ آخر -