پیڈو کی نجکاری کسی صورت قبول نہیں،لقمان خان

پیڈو کی نجکاری کسی صورت قبول نہیں،لقمان خان

  

درگئی(نمائندہ پاکستان ) پیڈو کی نجکاری قابل قبول؛ نہیں ۔ صوبائی حکومت منافع بخش ادارہ پیڈو کو اونے پونے داموں فروخت کرنے کے لئے اصلاحات کا ڈھونگ رچا رہی ہے۔ پرائیویٹ کمپنی کے ملازمین ہائیڈرو یونین کا نام استعمال کرکے پیڈو کے پرائیویٹائزیشن کے حق مین بیانات جاری سے گریز کریں ۔ ان خیالات کا اظہار پیڈو ملازمین نے پیڈو ملازمین کے یونین کے عہدیدار لقمان خان کے ذریعے جاری کردہ پریس ریلیز میں کیا۔ پیڈو کے ملازمین نے موقدف اختیار کیا کہ پیڈو صوبائی سطح پر منافع بخش ادارہ ہے اور صوبائی حکومت کو سالانہ ڈھائی ارب روپے کا منافع دیتی ہے اس کی نجکاری کا مطلب پیڈو کے ملازمین کی معاشی قتل عام ہوگی۔ انہون نے کہا کہنجکاری کا مقصد منظورِ نظر افرادکو اہم پوسٹوں پر تعینات کرنا اور صوبہ کے وسائل کو اونے پونے داموں بیچنا اور دوسرے صوبوں کے ماتحت کرنا ہے اور واضح کیا کہ پیڈو ایمپلائز یونین ملاکنڈ تھری سینٹرل پیڈو ایمپلائز یونین کی حمایت کرتے ہوئے پیڈو میں اصلاحات کے نام پر جاری پرائیویٹائزیشن کو مسترد کرتی ہے اور مالاکنڈ تھری بجلی گھر کو اپریٹ کرنے والی پرائیویٹ کمپنی کے ملازمین کی جانب سے اس سلسلے میں حمایتی بیانات اور پیڈو کے خلاف ہرزہ سرائی کو بلا جواز اور غیر ضروری قرار دی ہیں۔

مزید :

راولپنڈی صفحہ آخر -