موبی لنک اور این ٹی سی کے درمیا ن آئی سی ٹی سروسزکی فراہمی کا معاہدہ

موبی لنک اور این ٹی سی کے درمیا ن آئی سی ٹی سروسزکی فراہمی کا معاہدہ

  

کراچی(اکنامک رپورٹر ) موبی لنک اور نیشنل ٹیلی کمیونیکیشن کارپوریشن (این ٹی سی)کے درمیان ایک معاہدہ طے پایا ہے جس کے تحت موبی لنک این ٹی سی کے کسٹمرز کو اپنی ٹیلی کمیونیکیشن سروسز اور پروڈکٹس فراہم کرے گا۔ اس کے علاوہ مختلف سرکاری اداروں اور افسران کو فراہم کرنے کی غرض سے، اس ایگریمنٹ کے تحت، موبی لنک اپنی جی ایس ایم سروسز اور موبائل ہینڈ سیٹس بھی این ٹی سی کو رعایتی نرخوں پر فراہم کرے گا۔ معاہدے پر دستخطوں کی تقریب میں این ٹی سی کے چیئرمین وقار راشد خان اور موبی لنک پاکستان کے پریزیڈنٹ اور سی ای او جیفری ہیڈ برگ نے بھی شرکت کی۔ معاہدے پر این ٹی سی کی جانب سے ڈائریکٹر جنرل (آپریشنز) میجر (ریٹائرڈ) عاصم جیلانی اور موبی لنک کی جانب سے سی سی او اور ڈپٹی سی ای او عامر ابراہیم نے دستخط کیے۔ تقریب سے خطاب کرتے ہوئے موبی لنک کے پریذیڈنٹ اور سی ای او جیفری ہیڈبرگ نے کہا،’’موبی لنک نے ہمیشہ اورہر حیثیت میں، جو ہمارے لیے ممکن تھی، حکومت کی مدد کی ہے اور یہ ڈیل ہمیں ایک مرتبہ پھراس بات کا موقع فراہم کرتی ہے کہ ہم باکفایت نرخوں پر اپنی جدید ترین سروسز مختلف سرکاری اداروں اور ملازمین کو فراہم کریں۔ حکومت پاکستان کے ساتھ ہماری یہ شراکت یقیناً اس ملک کے ساتھ ہمارے عزم کی تکمیل میں ہے اور ہم اپنی بہترین صلاحیتوں کے ساتھ پاکستان کی خدمت جاری رکھیں گے۔ مجھے یقین ہے کہ این ٹی سی کے کسٹمرز بھی ہماری بہترین وائس سروسز کو سراہیں گے اور طویل عرصہ تک ان سے فائدہ اٹھائیں گے۔‘‘ اس پبلک 150پرائیوئٹ پارشراکت داری پر اپنے خیالات کا اظہار کرتے ہوئے این ٹی سی کے چیئرمین بریگیڈیئر وقار راشد خان نے کہا، ’’1996 میں اپنے قیام کے وقت سے اب تک ہم تمام سرکاری اداروں کو انتہائی جدید آئی سی ٹی سروسز فراہم کرتے رہے ہیں لیکن ہم اپنی اس کامیابی کو موبی لنک جیسے پرائیویٹ سیکٹر میں کام کرنے والے اداروں کی مرہون منت سمجھتے ہیں کیوں کہ ہم نے پارٹنر کے طور پر ہمیشہ ایسی ٹیلکوز کی طرف دیکھا ہے جو ہماری صلاحیتوں میں اضافہ کر سکیں اور باکفایت نرخوں پر ہمارے کسٹمرز کو سہولیات فراہم کر سکیں۔اس موقع پر موبی لنک کے ڈائریکٹر بزنس ڈیویلپمنٹ علی کامران نے کہا،’’دورجدید کی ٹیکنالوجیز اور اختراعات بہت زیادہ وسعت انگیز ہیں اور منظر عام پر آنے والے نت نئے بزنس ماڈل زیادہ ذہین اور نیٹ ورک کے حامل معاشرتی گروہ پیدا کر رہے ہیں۔ ایسی میں مشترکہ تخلیق کے لیے خصوصی شراکت کی ضرورت ہے اور سرکاری حلقہ اثر اقدار کے نئے ذرائع تعمیر کرنے کے لیے ایک منفرد وسیلہ ہے۔اپنے خیالات کا اظہار کرتے ہوئے بریگیڈیئر وقارراشد خان نے کہا،’’این ٹی سی کو مسلح افواج، دفاعی پروجیکٹس، وفاقی اور صوبائی حکومتوں اورایسی دیگرسرکاری ایجنسیوں یا سرکاری اداروں کو جن کی سفارش وفاقی حکومت کرے، آئی سی ٹی سروسز فراہم کے کرنے کے مینڈیٹ کے ساتھ قائم کیا گیا تھا۔‘‘ انہوں نے مزید کہا کہ ’’اس معاہدیپر دستخط کے بعد این ٹی سی سرکاری محکموں کو ان کی ضروریات اور تقاضوں کے مطابق جی ایس ایم/3جی اور دیگر متعلقہ سروسز فراہم کرنے کے قابل ہو جائے گی۔

مزید :

کراچی صفحہ آخر -