خود کشی کرنیوالے تینوں پولیس اہلکار تبادلہ چاہتے تھے

خود کشی کرنیوالے تینوں پولیس اہلکار تبادلہ چاہتے تھے
خود کشی کرنیوالے تینوں پولیس اہلکار تبادلہ چاہتے تھے

  

لاہور(ویب ڈیسک) چند ماہ کے دوران 2 اے ایس آئی اور ایک کانسٹیبل کی خودکشی میں ایک چیز مماثلت رکھتی ہے کہ تینوں کا تعلق بیرونی اضلاع سے تھا اور وہ اپنے اپنے ضلع میں تبادلہ کروانا چاہتے تھے جبکہ چند ہفتے قبل تھانہ ڈیفنس اے میں اے ایس آئی عظیم کی انگوائری رپورٹ افسر کا نام آنے پر دبا دی گئی۔ تفصیلات کے مطابق پولیس لائن میں کام کرنیوالے کانسٹیبل عمران، اسکے بعد تھانہ ڈیفنس اے انویسٹی گیشن میں تعینات اے ایس آئی عظیم اور گزشتہ روز اہلکار زبیر باجوہ کی خودکشی نے لاہور پولیس میں کھلبلی مچادی ہے، پولیس اہلکار خودکشیوں پر چہ مگوئیاں کررہے ہیں، اے ایس آئی عظیم کی خود کشی کی آئی جی پنجاب مشتاق سکھیراکے حکم پر انکوائری کی گئی، ذرائع کے مطابق ایس پی گینٹ اسماعیل کھاڑک کا نام آنے پر افسران نے انکوائری رپورٹ کا دبا لیا۔

مزید :

لاہور -