زلفی بخاری تین سوٹ کیسوں کیساتھ لندن واپس پہنچ گئے

زلفی بخاری تین سوٹ کیسوں کیساتھ لندن واپس پہنچ گئے
زلفی بخاری تین سوٹ کیسوں کیساتھ لندن واپس پہنچ گئے

  

لندن (مانیٹرنگ ڈیسک) تحریک انصاف کے چیئرمین عمران خان کے قریبی وبا اعتماد ساتھی زلفی بخاری ، چیئرمین پی ٹی آئی کا اپنی سابقہ اہلیہ ریحام خان کیلئے پیغام لیکر لندن واپس پہنچ گئے۔ روزنامہ جنگ کے مطابق عمران خان کی جانب سے کام کرتے ہوئے برطانوی شہری و تاجر زلفی بخاری نے وسطی لندن کے ہوٹل میں ریحام خان سے ”بحرانی مذاکرات“ کئے اور ان سے درخواست کی کہ طلاق کی وجوہات کے بارے میں میڈیا سے بات نہ کریں۔ پھر وہ پاکستان گئے اور بنی گالا میں چارراتوں تک قیام کیا اور عمران خان سے تفصیلی بات چیت کی۔

ذرائع کے مطابق زلفی بخاری جمعہ کو علی الصباح لندن کے ہیتھرو ایئرپورٹ پراترے تو ان کے ساتھ تین سوٹ کیس دیکھے گئے۔ انہیں ان کے آفس کے دو سٹاف ممبر ز نے ریسیو کیا۔ عملے کا ایک رکن ایک سوٹ کیس ایک الگ کار میں لیکر اکیلا چلا گیا تویہ تو ہمیں معلوم ہے کہ سوٹ کیسز میں کیا تھا، مگر یہ تصدیق کی جاسکتی ہے کہ زلفی بخاری اتوار کو پی آئی اے کی فلائٹ سے جب پاکستان گئے تھے تو انکے ساتھ صر ف ایک سوٹ کیس تھا۔

پی ٹی آئی کے ذریعہ نے بتایا کہ زلفی بخاری پاکستان سے عمران خان کا ریحام خان کیلئے پیغام لیکر آئے ہیں جو ایک اعلیٰ سطح کی فیصلہ کن ملاقات میں انہیں پہنچایا جائے گا۔ ذریعہ کے مطابق زلفی بخاری جمعہ یا ہفتہ کو ریحام سے ملیں گے جس کے بعد ریحام خان اپنا مستقبل کا طرز عمل طے کریںگی۔ تمام نظریں ان پر جمی ہیں کہ وہ پیغام ملنے کے بعد کس طرح ردعمل کا اظہار کرتی ہیں۔ قابل اعتماد پی ٹی آئی ذریعہ نے بتایا کہ زلفی نے قیام اسلام آباد کے دوران پارٹی کے دو سینئر رہنماﺅں سے بھی ملاقات کی، وہ پارٹی کے ایک دو لتمند رہنما کے بنگلے پر بھی گئے، دوسرے رہنما بھی وہاں موجود تھے۔

انہوں نے طلاق کے اثرات کا جائزہ لیا جس کے بعد زلفی لندن روانہ ہو گئے۔طلاق کے اس معاملے پر ان کے کردار سے متعلق جاننے کیلئے جب ان سے موبائل فون پر رابطہ کیا گیا تو انہوں نے جارحانہ انداز گفتگو اپنایا۔ انہوں نے قانونی کاروائی کی دھمکی دی، جب انہیں بتایا گیا کہ پی ٹی آئی کے سینئر لیڈر نے پارٹی چیئرمین کےساتھ بنی گالا میں ملاقات کی تصاویر باضابطہ طورپر جاری کی ہیں تو زلفی بخاری نے کہا کہ وہ جلد اپنے وکلاءکے ذریعہ بات کریں گے۔ مزید دھمکیاں اور نازیبا جملے کہتے ہوئے فون بند کر دیا۔ زلفی بخاری کے لندن میں کنزرویٹو لیڈروں کے گروپ سے رابطے ہیں۔

مزید :

بین الاقوامی -