دہشتگردی کیخلاف اپنے زوربازو پر لڑ رہے ہیں ،قائم علی شاہ

دہشتگردی کیخلاف اپنے زوربازو پر لڑ رہے ہیں ،قائم علی شاہ
دہشتگردی کیخلاف اپنے زوربازو پر لڑ رہے ہیں ،قائم علی شاہ

  

کراچی (مانیٹرنگ ڈیسک )وزیراعلیٰ سندھ قائم علی شاہ نے ایک بار پھر شکایتوں کے انبار لگا دیئے ۔ان کا کہنا ہے کہ وزیراعظم نے 12ارب روپے کے وعدے کیئے لیکن ایک پائی بھی ادا نہیں کی،اپنے زور بازو پر دہشتگردوں کیخلاف لڑ رہے ہیں ۔وزیراعظم کہتے ہیں لڑو چوٹ لگی تو میں حاضر ،پانی کا منصوبہ بھی بنایا مگر اس کے بھی پیسے نہیں ملے ،تعلیم اور صحت کے شعبوں میں بھی وفاقی مداخلت ہے ۔انہوں نے کہا کہ پہلا مسئلہ امن و امان ہے ،سٹریٹ کرائم میں 70فیصد کمی آئی ہے ۔وزیراعلیٰ نے مزید بتایا کہ اس سال کراچی میں مختلف شعبوں کے لیے 64 ارب روپے مختص کیے ہیں، پیپلزپارٹی کے چیرمین نے کراچی کے لیے 150 ارب روپے کا منصوبہ بنایا ہے، کراچی میں صفائی پر توجہ دینے کی ضرورت ہے، صفائی کے عملے کو کام کرنا چاہیے،تنخواہیں اور سہولیتں بھی دیں گے، وزیراعلیٰ نے کہا کہ کراچی پاکستان کامعاشی حب اور بین الاقومی اہمیت کا شہر ہے،کراچی کے عوام کی بے لوث خدمت کریں گے ،انہوں نے بتایا کہ حکومت سندھ نے صحت کےلئے13ارب روپے مختص کیے ہیں، سرکاری طور پر 3 میڈیکل یونیورسٹیاں بنائی ہیںجبکہ تعلیم کے لیے 11 ارب روپے مختص کیے گئے ہیں۔انہوںنے کہا کہ ہم نے تعلیم اور صحت کے لیے بجٹ کو بڑھایا ہے، تعلیم اور صحت کے بغیر زندگی کچھ نہیں ہے اور حکومت کا اولین فرض ہے کہ تعلیم اور صحت کے سلسلے میں سہولتیں فراہم کرے۔

مزید :

کراچی -اہم خبریں -