دنیا کی واحد خاتون جس کا چہرہ نہیں، دردناک حالت کے باوجود ایک بات ایسی کہہ دی کہ جان کر آپ بھی حوصلے کی داد دینے پر مجبور ہو جائیں

دنیا کی واحد خاتون جس کا چہرہ نہیں، دردناک حالت کے باوجود ایک بات ایسی کہہ دی ...
دنیا کی واحد خاتون جس کا چہرہ نہیں، دردناک حالت کے باوجود ایک بات ایسی کہہ دی کہ جان کر آپ بھی حوصلے کی داد دینے پر مجبور ہو جائیں

  

نئی دلی (نیوز ڈیسک) قدرت کی ہزار ہا نعمتوں سے مالا مال ہونے کے باوجود ہم شکر ادا کرنے سے بھی غافل رہتے ہیں لیکن بھارت میں ایک عمر بغیر چہرے کے گزارنے والی 21 سالہ لڑکی خدیجہ خاتون کہتی ہے کہ خدا نے اسے جیسا بنایا ہے وہ اس پر خوش ہے اور اس کا شکر اداکرتی ہے۔

نیورو فائبرو مارٹوسس نامی جینیاتی بیماری کی شکار اس لڑکی کے چہرے کی جگہ گوشت کے لٹکتے ہوئے لوتھڑے ہیں۔ نہ اس کی آنکھیں ہیں اور نہ ہی ناک نظر آتی ہے، البتہ منہ کی جگہ ایک سوراخ ضرور موجود ہے۔ وہ مغربی بنگال کے شہر کولکتہ میں ایک غریب مسلمان گھرانے میں پیدا ہوئی۔ والدین نے اس کی بیماری کے علاج کی ہرممکن کوشش کی لیکن بالآخر ڈاکٹروں نے بتایا کہ اس کا علاج ممکن نہیں۔

مزید جانئے: امریکی صدارتی امیدوار نے ملالہ سے متعلق شرمناک خواہش کااظہار کردیا

اگرچہ خدیجہ کو دیکھنے والوں کی آنکھوں میں آنسو آجاتے ہیں مگر وہ کہتی ہے ’’مجھے خدا نے اس طرح کا بنایا ہے اور میں اسے خوشی سے تسلیم کرتی ہوں، میرے لئے زندگی گزارنے کے لئے جو ممکن ہے میں وہ کرتی ہوں۔ یہ کوئی دردیا مصیبت کی بات نہیں ہے بلکہ میں جیسے ہوں اسی حال میں زندہ رہتی ہوں اور اپنے خالق کی تخلیق پر خوش ہوں۔‘‘

مزید جانئے: بھارت میں ایک اور مسلمان بڑھتی ہوئی ہندو انتہا پسندی کی بھینٹ چڑھ گیا

خدیجہ کے والد راشد اور والدہ آمنہ بی بی کا کہنا ہے کہ جب ان کی بیٹی دو ماہ کی تھی تو آنکھیں نہیں کھول پارہی تھی جس سے انہیں اس کی بیماری کے بارے میں کچھ اندازہ ہوا۔ بعد میں یہ بیماری بڑھتی گئی اور اس کا چہرہ گوشت کے لٹکتے ہوئے لوتھڑوں کی صورت میں بدل گیا۔ وہ کہتے ہیں کہ ان کی بیٹی نے تمام عمر نہایت تکلیف میں گزاری ہے لیکن اس کے لب پر کبھی شکوہ نہیں آیا بلکہ وہ ہمیشہ خدا کا شکر ادا کرتی نظر آتی ہے۔

مزید :

ڈیلی بائیٹس -