چین کاوہ ہمسایہ ملک جس کے سربراہ سے چینی صدر نے گذشتہ روز تاریخ میں پہلی مرتبہ ہاتھ ملایا

چین کاوہ ہمسایہ ملک جس کے سربراہ سے چینی صدر نے گذشتہ روز تاریخ میں پہلی ...
چین کاوہ ہمسایہ ملک جس کے سربراہ سے چینی صدر نے گذشتہ روز تاریخ میں پہلی مرتبہ ہاتھ ملایا

  

سنگاپور(مانیٹرنگ ڈیسک)چین اور تائیوان کی تاریخ میں پہلی بار دونوں ممالک کے صدور کی ملاقات ہوئی ۔ملاقات سے قبل شی جن پنگ اور ماینگ جیو نے صحافیوں کی ایک بڑی تعداد کی طرف دیکھ کر ہاتھ ہلایا۔ملاقات کے بعد چینی صدر شی جن پنگ کا کہنا تھا کہ’’ہم اب بھی ایک خاندان ہیں،کوئی طاقت ہمیں ایک دوسرے سے جدا نہیں کر سکتی۔‘‘تائیوان کے صدر نے کہا کہ وہ آبنائے تائیوان میں امن کے فروغ کے لیے ہر ممکن اقدام کریں گے، دونوں ممالک کو ایک دوسرے کے طرز زندگی اور روایات کا احترام کرنا چاہیے۔‘‘ 1949ء کے بعد دونوں خطوں کے رہنماؤں کی یہ پہلی ملاقات ہے اور چین میں عہدیدار توقع کا اظہار کر رہے ہیں کہ یہ ایک آبنائے کے آرپار تعلقات میں فروغ کے لیے ایک تاریخی سنگ میل ثابت ہوگی۔

مزید جانئے: سمندری حدود میں گھسنے والے امریکی بحری بیڑے سے چینی فوجیوں نے کیا کیا؟ جان کر آپ بھی ہنسنے پر مجبور ہو جائیں گے

چین میں اس ملاقات پر خوشی کا تاثر پایاجا رہا ہے تو دوسری طرف تائیوان کے شہری اس پر غم و غصے کا اظہار کر رہے ہیں۔جب تائیوان کے صدر اپنی چینی ہم منصب سے ملاقات کے لیے روانہ ہوئے تو ادھر تائیوان میں مشتعل مظاہرین نے پارلیمنٹ پر دھاوا بولنے کی کوشش کی تاہم پولیس مظاہرین کو منتشر کرنے میں کامیاب ہو گئی اورخوش قسمتی سے کوئی بڑا واقعہ رونما نہ ہوا۔ متعدد مظاہرین اب بھی تائیوان کی پارلیمنٹ کے باہر دھرنا دئیے ہوئے ہیں۔چین اب بھی تائیوان کو اپنا حصہ تصور کرتا ہے اور وہ چاہتا ہے کہ یہ دونوں ملک دوبارہ مل جائیں مگر اس سلسلے میں تائیوان میں شدید مخالفت پائی جاتی ہے۔

مزید :

ڈیلی بائیٹس -