داعش ،حوثی اور ان جیسی تنظیمیں صرف مسلمانوں میں انتشار کیلئے بنائی گئی ہیں،طاہر محمود اشرفی

داعش ،حوثی اور ان جیسی تنظیمیں صرف مسلمانوں میں انتشار کیلئے بنائی گئی ...

لاہور( نمائندہ خصوصی) محراب ومنبر کے وارثوں کو معاشرے سے عدم برداشت اور عدم رواداری کے خاتمے کیلئے کردار اداکرنا ہے۔ عصر حاضر کا سب سے بڑا فتنہ دہشتگردی اور انتہاپسندی ہے ۔داعش ،حوثی اور ان جیسی تنظیمیں صرف مسلمانوں میں انتشار کیلئے بنائی گئی ہیں۔ بین المسالک بین المذاہب مکالمہ وقت کی ضرورت ہے اور قرآن وسنت نے ہمیں اس طرف رہنمائی دی ہے ۔ یہ بات پاکستان علماء کونسل کے مرکزی چیئرمین اور وفاق المساجد پاکستان کے صدر حافظ محمد طاہر محمود اشرفی نے رائیونڈ اجتماع پر آئے ہوئے مختلف علماء اور آئمہ کے وفود سے خطاب کرتے ہوئے کہی۔ انہوں نے کہا کہ پاکستان علماء کونسل انتہاپسندی اور دہشت گردی کے خاتمے اور بین المسالک بین المذاہب مکالمہ کیلئے جدوجہد کررہی ہے۔ پاکستان میں مسلمانوں کے ساتھ غیر مسلم بھی رہتے ہیں اور کسی بھی گروہ ،جماعت کو یہ حق حاصل نہیں ہے کہ وہ اپنی سوچ اور فکر کو ان پر مسلط کرے۔ انہوں نے کہا کہ علماء،آئمہ اور خطباء پر یہ ذمہ داری عائد ہوتی ہے کہ وہ عوام الناس کو اسلام کے پیغام اعتدال سے آگاہ کریں اور انتہاپسندی اور دہشت گردانہ عزائم رکھنے والے گروہوں سے بچائیں۔انہوں نے کہا کہ مکہ اور مدینہ مسلمانوں کی وحدت اورعقیدت کے مرکز ہیں اور کسی بھی ملک ،گروہ یا جماعت کو یہ حق نہیں دیا جاسکتا کہ وہ مسلمانوں کے مراکز پر حملہ آور ہو۔جس گروہ نے مکہ مکرمہ پر حملے کی کوشش کی ہے وہ نہ شیعہ ہے نہ سنی ہے بلکہ وہ مسلمانوں کا دشمن ہے ۔انہوں نے ملک کی موجودہ صورتحال پر گفتگوکرتے ہوئے کہا کہ احتساب سب کا ہونا چاہئے ۔جب تک میاں نواز شریف گنہگار ثابت نہیں ہوتے انہیں استعفیٰ نہیں دینا چاہئے۔ اس مو قع پر مولانا محمد مشتاق لاہوری،مولانا اشفاق پتافی،مولانا عبد القیوم،مولانا رسال الدین آزاد،قاری عبد لحکیم اطہر ،مولانا زبیر زاہد ودیگر بھی موجود تھے۔

مزید : میٹروپولیٹن 1


loading...