نجی شعبہ کے تعاون سے جنوبی پنجاب میں سا ئیلوز تعمیر کرنے کا فیصلہ

نجی شعبہ کے تعاون سے جنوبی پنجاب میں سا ئیلوز تعمیر کرنے کا فیصلہ

لاہور(خبرنگار) صوبائی وزیر خوراک بلال یاسین نے بتایا کہ نجی شعبہ کے اشتراک سے جنوبی پنجاب کے مختلف اضلاع میں سائیلوز تعمیر کرنے کا فیصلہ کیا گیاہے۔اس حوالے سے محکمہ خوراک کے ڈویژنل ہیڈز کو ہدایت کی گئی ہے کہ وہ اپنے اپنے علاقوں میں موزوں قطعہ ہائے اراضی منتخب کریں تاکہ اس ماہ کے آخر تک مفاہمت کی یادداشت پر دستخط کئے جا سکیں۔اس اقدام کا مقصد محکمہ خوراک کو جدید خطوط پر استوار کرنا اور گندم کو زیادہ سے زیادہ ذخیرہ کرنا مقصد ہے تاکہ اس محکمہ کی خدمات سے نجی شعبہ بشمول کسانوں کو بھر پو رفائدہ پہنچے اورگندم کوسائنسی تقاضوں کے مطابق محفوظ کرنے میں مدد ملے گی۔ان خیالات کا اظہار صوبائی وزیر خوراک بلال یاسین نے گزشتہ روز اپنے دفتر میں ویڈیولنک کے ذریعے محکمہ خوراک کے ڈویژنل سربراہان کے ساتھ اجلاس کی صدارت کرتے ہوئے کہی۔اجلاس میں قائم مقام سیکرٹری آصف بلال لودھی اور محکمہ کے دیگر افسران نے شرکت کی۔صوبائی وزیر نے کہا کہ 10ماہ میں 40مختلف جگہوں پر سائیلوز تعمیر کئے جائیں گے جن کا مقصد گندم کو جدید اور سائنسی تقاضوں کے مطابق محفوظ کرناہے اور اس طرح گندم ضائع ہونے سے بچایا جا سکے گا۔اس حوالے سے یہ منصوبہ بندی کی گئی ہے کہ جون 2018ء تک 120مختلف جگہوں پر سائیلوز تعمیر کئے جائیں گے۔صوبائی وزیر نے کہاکہ نجی شعبہ کو یہ سہولت ہوگی کہ وہ اپنی فالتو گندم ان سائیلوز میں محفوظ رکھ سکیں ۔ انہوں نے ڈویژنل ہیڈز کو ہدایت کی کہ فالتو گندم نجی ملوں کو فروخت کرنے کے لئے اقدامات کو تیز تر کیا جائے۔ انہوں نے کہا کہ ہمارا مقصد ہے کہ محکمہ خوراک کو جدید خطوط پر استوار کیاجائے تاکہ اس کی خدمات سے صوبہ پنجاب کے ساتھ ساتھ دیگر صوبوں کے عوام بھی مستفید ہوسکیں۔اس طرح گندم کی قیمتوں کو مناسب سطح پر بھی رکھنے میں مدد ملے گی۔

مزید : میٹروپولیٹن 1


loading...