سینیٹ قائمہ کمیٹی کے اجلاس میں ’’پاناما پیپرز انکوئری بل 2016‘‘منظور ہونے کا امکان

سینیٹ قائمہ کمیٹی کے اجلاس میں ’’پاناما پیپرز انکوئری بل 2016‘‘منظور ہونے ...

اسلام آباد(آئی این پی)سپریم کورٹ آف پاکستان اور پارلیمینٹ میں (آج)پیرکوپانامہ لیکس کا معاملہ زیر غور آئے گا،سینیٹ کی قائمہ کمیٹی قانون و انصاف میں متحدہ اپوزیشن کی جانب سے جمع کرائے گئے ''پاناما پیپرز انکوائری بل''2016پر بحث ہوگی،پیپلز پارٹی نے اپنے تمام ارکان کمیٹی اور بل کے 33اپوزیشن محرکین کو اجلاس میں لازمی شرکت کیلئے بیک چینل ہدایت کردی ہے ، سینیٹ کی قانون و انصاف کمیٹی میں اپوزیشن کو واضح اکثریت حاصل ہے کمیٹی کے12ارکان میں سے 8ارکان کا تعلق اپوزیشن جماعتوں اور 4کا تعلق مسلم لیگ (ن)سے ہے۔تفصیلات کے مطابق سینیٹ کی قائمہ کمیٹی برائے قانون و انصاف کا اجلاس چیئرمین سینیٹر محمد جاوید عباسی کی زیر صدارت (آج) پیر کو دوپہر اڑھائی بجے پارلیمینٹ ہاؤس میں ہوگا۔ کمیٹی کے اجلاس میں متحدہ اپوزیشن کی جانب سے جمع کرائے گئے ''پانامہ پیپرز انکوائری بل''2016پر بحث ہوگی۔ پیپلز پارٹی نے اپنے تمام ارکان کمیٹی اور بل کے 33اپوزیشن محرکین کو اجلاس میں لازمی شرکت کیلئے بیک چینل ہدایت کردی ہے۔ سینیٹ کی قانون و انصاف کمیٹی میں اپوزیشن کو واضح اکثریت حاصل ہے کمیٹی کے12ارکان میں سے 8ارکان کا تعلق اپوزیشن جماعتوں اور 4کا تعلق مسلم لیگ (ن)سے ہے۔ کمیٹی میں اپوزیشن ارکان میں پیپلز پارٹی کے سینیٹرز اعتزاز احسن ‘ نوابزادہ سیف اﷲ مگسی‘ ڈاکٹر بابر اعوان‘ سعید غنی‘ فاروق ایچ نائیک‘ ایم کیو ایم کے سینیٹر محمد علی خان سیف‘ مسلم لیگ فنکشنل کے سینیٹر سید مظفر حسین شاہ‘ اے این پی کی سینیٹر زاہدہ خان شامل ہیں جبکہ کمیٹی میں حکومتی ارکان میں میں چیئرمین محمد جاوید عباسی‘ سینیٹر سلیم ضیاء‘ سینیٹر نہال ہاشمی اور سینیٹر عائشہ رضا فاروق شامل ہیں۔ کمیٹی میں اپوزیشن کو اکثریت ہونے کی وجہ سے امکان ہے کہ ''پانامہ پیپرز انکوائری بل''2016 اکثریت سے منظور کرلیا جائے گا۔

مزید : صفحہ اول


loading...