پی ٹی آئی کا مرکزی حکومت کیخلاف عدالت جانے کا فیصلہ

پی ٹی آئی کا مرکزی حکومت کیخلاف عدالت جانے کا فیصلہ

  



پورن(نمائندہ پاکستان) پاکستان تحریک انصاف نے مرکزی حکومت کے خلاف عدالت جانے کا فیصلہ کرلیا شانگلہ کے سینئر قانوندان فیاض احمد خان شاہپوری پشاور ہائی کورٹ میں رٹ پیٹیشن دائر کرینگے مرکزی حکومت کی جانب سے خیبر پختونخواہ پی ٹی آئی کے پرامن مظاہرین اور نہتے شہریوں پر بہمانہ لاٹھی چارج شیلنگ اور تشددد انسانی حقوق اور آئین کے خلاف ورزی ہے الپوری میں میڈیا سے گفتگو کرتے ہوئے پی ٹی آئی کے وکیل فیاض احمدخان اور علامہ اقبال نے بتایا کہ مرکزی حکومت نے خیبرپختونخواہ کے نہتے عوام اور پی ٹی آئی کے پرامن کارکنوں کے خلاف انتہائی ظلم بربریت کا مظاہرہ کیاہے دوران شیلنگ ہم نے پنجاب پولیس سے گیس گن اور شیل بھی اپنے قبضے میں لئے تھے جوکہ ایکسپائر تھے انہوں نے ایکسپائر شیل بھی صحافیوں کو پیش کئے ہم خالی ہاتھ اسلام اباد جارہے تھے ہمارا کیا قصور تھا انہوں نے اپنے مقامی ایم پی اے وزیر اعلی کے مشیر حاجی عبدالمنعیم پر سخت تنقید کی کہ انہوں نے شانگلہ پی ٹی آئی کے کارکنوں کو مایوس کردیا ہے اسلام آباد جانے کے موقع پر حاجی عبدالمنعم اکیلے یہاں سے چلے گئے جب کہ پی ٹی آئی کے کارکنان بغیر کسی لیڈر کے یہاں سے دھرنے میں شرکت کے لئے جانکلے انہوں نے پارلیمانی سیکرٹری شوکت یوسفزئی کا شکریہ ادا کیا اور اُن کو شیلنگ کے سخت حالات کے دوران کارکنوں سے شانہ بشانہ ہونے پر خراج تحسین پیش کی ان کا کہنا تھا کہ شوکت یوسفزئی واحد تحریک انصاف کا وہ لیڈر تھا جو محازجنگ بھی کارکنوں کی حوصلہ بڑھاتے رہے اور کارکنوں کے ساتھ رہے ۔

مزید : پشاورصفحہ آخر


loading...