پنجا ب سے ٹینکروں میں آنیوالے دودھ نے ڈیر ہ کے عوام کو پیٹ اور انتوں کی مختلف بیماریوں میں مبتلاء کر دیا

پنجا ب سے ٹینکروں میں آنیوالے دودھ نے ڈیر ہ کے عوام کو پیٹ اور انتوں کی مختلف ...

ڈیرہ (بیورو رپورٹ) پنجا ب سے ٹینکروں میں آنیوالے دودھ نے ڈیر ہ کے عوام کو پیٹ اور انتوں کی مختلف بیماریوں میں مبتلاء کر دیا ڈاکٹرو ں کے مطا بق پنجاب سے ٹینکروں میں آنیوالا کیمکل ملا دودھ انتہائی خطرناک اور مہلک بیماریوں کو سبب بن رہا ہے کیونکہ اس میں مختلف قسم کے خطر ناک پاؤڈر اور کیمکل کا استعمال کیا جا تا ہے جس سے دودھ کو گاڑھا کر دیا جاتا ہے اور اس دودھ کی دہی بھی بنتی ہے اور اس دودھ پر ملائی بھی خالص دودھ سے زیادہ مقدار میں بنتی ہے یہ دودھ ڈیر ہ شہر میں دودھ فروشوں کے علاوہ حلوائی اور مٹھائی کا کاروبار کرنے والے دکاندار بھی یہی دودھ استعمال کر رہے ہیں اور یہ تمام کاروبار محکمہ فو ڈ اور محکمہ ہیلتھ کی ملی بھگت سے جاری ہے اس کیمکل ملے دودھ کے عوض میں یہ محکمے بھاری معاوضہ وصول کرتے ہیں دودھ لانے والے ٹینکروں کے ڈرائیوروں کے مطا بق ہم پنجاب پولیس کی چیک پوسٹ اور تھانہ یونیورسٹی کی ڈیرہ دریا خان پل پر قائم چیک پوسٹ پر تعینات اہلکار بھی اس میں اپنا حصہ وصول کرتے ہیں کمشنر ڈیر ہ اور ڈپٹی کمشنر ڈیر ہ سے عوامی حلقوں نے پر زور مطالبہ کیا ہے کہ وہ جلد از جلد اس دودھ کی روک تھام کیلئے اقدامات کریں اس دودھ کا لیبارٹر ی ٹیسٹ کرایا جا ئے تاکہ ڈیر ہ کی عوام کو بیماریوں سے بچ جائے ۔

مزید : پشاورصفحہ آخر


loading...