تھر میں فلاح انسانیت فاؤنڈیشن کی امدادی سرگرمیاں

تھر میں فلاح انسانیت فاؤنڈیشن کی امدادی سرگرمیاں

حیدرآباد(بیورورپورٹ) فلاح انسانیت فاؤنڈیشن کی جانب سے تھرپارکر میں بڑے پیمانے پر نئے مزید پروجیکٹوں کا آغاز کیاگیا ، چیئرمین فلاح انسانیت فاؤنڈیشن حافظ عبدالرؤف نے دورہ تھرپارکر کے موقع پر اسلام کوٹ میں واقع فلاحی مرکز میں ماڈرن ہسپتال کا سنگ بنیاد رکھتے ہوئے مقامی سیاسی و سماجی ،فلاحی اداروں کے سربراہان سے خطاب کرتے ہوئے کہاکہ ہم نے تھرپارکر میں مزید نئے منصوبوں کا آغاز کردیاہے جس میں صحت کی سہولیات ،پانی کے مزیدنئے پروجیکٹ،سولر سسٹم کے ذریعے زراعت کو فعال کرکے ٹیوب ویل اور راشن کی مختلف علاقوں میں تقسیم کاری ، اس کے ساتھ ساتھ لوگوں کو معاشی حوالے سے نئے روزگار کے مواقعے فراہم کرنا، تعلیم اور تربیت کے حوالے سے چھوٹے چھوٹے علاقوں اور گاؤں میں اسکولوں کا قیام اور دیگر منصوبوں پر کام خصوصی طورپر پلاننگ کی جارہی ہے تاکہ تھرپارکر کے باسیوں کو زیادہ سے زیادہ سہولیات پہنچائی جاسکے۔ انہوں نے کہاکہ یہ خدمت ہم عبادت سمجھ کر سرانجام دے رہے ہیں اوراسی بنیاد پر بلاتفریق تھرپارکر کے پسماندہ لوگوں کی خدمت کی جارہی ہے ۔ انہوں نے کہاکہ مٹھی فلاحی مرکز میں ہسپتال کی تعمیرکا کام مکمل ہوچکا ہے ۔ اب تحصیل کی سطح پر اسلام کوٹ میں ماڈرن ہسپتال کا سنگ بنیاد رکھا جارہا ہے ، انہوں نے کہاکہ تھرپارکر کی غربت اور پسماندگی دیکھ کر دل خون کے آنسو روتا ہے ، فلاح انسانیت فاونڈیشن نے ہمیشہ تھرپارکر کے علاقوں کو اہمیت دیتے ہوئے وہاں پر بڑے پیمانے پر فلاحی پروجیکٹوں کا آغاز کیا ہوا ہے ۔ لوگوں کو معاشی طورپر مستحکم کرنے کے سلسلے میں سولر سسٹم کے تحت پانی کے نئے ٹیوب ویل دیئے جارہے ہیں۔ مختلف گاؤں اور گوٹھوں میں سولر سسٹم کے تحت پانی کی ٹنکیاں اور جانوروں کو پانی پلانے کے خصوصی انتظامات کئے جارہے ہیں۔ انہوں نے کہاکہ صحت کے شعبے میں میڈیکل کیمپوں کے ذریعے علاج بھی کیاجارہا ہے ۔اس موقع پر ڈپٹی چیئرمین فلاح انسانیت فاؤنڈیشن شاہد محمود نے خطاب کرتے ہوئے کہاکہ فلاح انسانیت فاؤنڈیشن تھرپارکر کے پسماندہ لوگوں کی خدمت کرنا اپنی پہلی ترجیح رکھتی ہے ۔ اس وقت تھرپارکر میں جاری فلاحی منصوبوں پر کام کروڑوں روپے خرچ کئے جارہے ہیں ۔ انہوں نے کہاکہ کراچی ، حیدرآباد اور دیگر سندھ کے علاقوں میں قائم ہسپتال کی کامیابی کے بعد اب تھرپارکرمیں بھی مٹھی اور اسلام کوٹ میں ہسپتال تعمیر کئے جارہے ہیں۔تاکہ انہیں صحت کی سہولیات میسر آسکے۔

مزید : پشاورصفحہ آخر


loading...