قبائلی عوام کی فلاح بہبود کیلئے محتص فنڈز پولیٹیکل ایجنٹ اور عملہ ہڑپ کر گیا

قبائلی عوام کی فلاح بہبود کیلئے محتص فنڈز پولیٹیکل ایجنٹ اور عملہ ہڑپ کر گیا

ٹا نک(بیورو رپورٹ) قبائلیوں کے فلاح وبہبود کے لئے قائم ایجنسی ڈویلپمنٹ فنڈ زپر پولیٹکل ایجنٹ اور اس کے ماتحت عملہ کا ڈاکہ ماہانہ لاکھوں روپے کے اخراجات کی مد میں نکال کرہڑپ کرنے کا سلسلہ جاری تفصیلات کے مطابق پولیٹکل انتظامیہ جنوبی وزیرستان کے زیر اہتمام محسود و وزیر قبائل کے غریب طلباء ،بیواؤں،بیماروں ،معزوروں اور یتیموں کی فلاح وبہبود کے لئے قائم کردہ اے ڈی ایف فنڈ جو جنوبی وزیرستان کے قبائلیوں پر اندرون ملک سے جنوبی وزیرستان میں داخل ہونے والی غذائی اشیاء ،ادویات ،سیمنٹ،سریا اور دیگر روز مرہ کے استعمال ہونے والی اشیاء پر ٹیکس لگاکر روز انہ کی بنیاد پر 30سے50 لاکھ روپے تک وصولی ہوتی ہے ذرائع کے مطابق پولیٹکل انتظامیہ کے اعلی افسران اپنی تنخواہوں اور ہارڈ ایریا الاؤنس کے علاوہ مزکورہ فنڈ کو اپنی ذاتی مقاصد کے لئے استعمال کر رہے ہیں ذرائع کے مطابق پولیٹکل ایجنٹ ظفرالاسلام خٹک ،اے پی او سرویکئی محمد شعیب ،اے پی ا ے لدھا اور اے پی اے وانا فی کس 55 ہزار کیچن کے نام ماہانہ وصول کر رہے ہیں جب کہ پولیٹکل انتظامیہ کے کلریکل سٹاف اور فاٹا سیکرٹریٹ اور گورنر ہاؤس میں بیٹھے ہوئے بعض اعلی حکام بھی مذکورہ فنڈ سے ماہانہ لاکھوں روپے کا بھتہ وصول کرتے ہیں اس حوالے سے ممتاز قبائل رہنما ملک اے ڈی محسود نے میڈیا کے نمائندوں سے گفتگو کرتے ہوئے کہا کہ اے ڈی ایف فنڈ غریب قبائلیوں کے فلاح و بہبود پر خرچ کرنے کے بجائے اپنے پیٹ کا ایندھن بنارہے ہے جو قبائلی عوام کے ساتھ بہت بڑی زیادتی ہے ان کا کہنا تھاکہ اگر پولیٹکل انتظامیہ کی کرپشن اور لوٹ کھسوٹ کے بارے میں کوئی آواز بلند کرتاہے تو ان کے خلاف 40 ایف سی آر کے کالے قانون کے تحت کاروائی کی جاتی ہے اور ان کی آواز کو دبادیا جاتاہے انہوں نے صدر پاکستان ،وزیراعظم پاکستان اور گورنر کے پی سے ملوث افسران کے خلاف قانونی کاروائی سمیت ان کے فوری تبادلے اور جنوبی وزیرستان ایجنسی میں فرض شناس افسران کی تعیناتی کا مطالبہ کیا ہے ۔

مزید : پشاورصفحہ اول


loading...