خیبر ایجنسی، حکومت کو انتہائی مطلوب 2کمانڈروں سمیت درجنوں عسکریت پسند گرفتار، بھاری اسلحہ بر آمد

خیبر ایجنسی، حکومت کو انتہائی مطلوب 2کمانڈروں سمیت درجنوں عسکریت پسند ...

جمرود(اے این این)خیبر ایجنسی کی تحصیل جمرود میں سرچ آپریشن میں 2اہم کمانڈروں سمیت درجنوں عسکریت پسندوں کو گرفتارکر کے بھاری مقدار میں اسلحہ برآمد کرلیا گیا جبکہ کرفیو کے نافذ کے باعث پاک افغان شاہراہ سات گھنٹے بند رہی ، مسافروں کو شدید مشکلات کا سامنا بھی کرنا پڑا جبکہ اسسٹنٹ پولیٹیکل ایجنٹ جمرود ضیاء الرحمن کا کہنا ہے کہ امن وامان کا قیام ہماری ذمہ داری ہے ،آپریشن عوام کے جان ومال کا تحفظ یقینی بنانے کیلئے کیا گیا،کرفیو کے باعث عوام کو درپیش مشکلات پر معذرت خواہ ہیں ۔تفصیلات کے مطابق ہفتے اور اتوار کی درمیانی شب نامعلوم افراد نے تختہ بیگ چیک پوسٹ پر حملہ کر کے خاصہ دار فورس کے ایک اہلکار شاہد خان کو شہید اور تین ایف سی اہلکاروں کو زخمی کردیا تھا جس کے بعد سیکورٹی فورسز اور جمرود پولیٹکل انتظامیہ نے اتوار کو خیبر ایجنسی کی تحصیل جمرود پر کرفیو نافذ کردیا اور پاک افغان شاہراہ کو ہر قسم کی ٹریفک کے لئے بند کردیا۔ پولیٹکل انتظامیہ اور سیکورٹی فورسز نے جمرود کے مختلف علاقوں میں سرچ آپریشن کیا ،سیکورٹی فورسز ذرائع کے مطابق گزشتہ شب حملے میں ملوث اہم عسکریت پسند کو گرفتا ر کر لیا گیاجبکہ آپریشن کے دوران بھاری مقدار اسلحہ بھی برآمد ہوا ہے۔ اسسٹنٹ پولیٹکل ایجنٹ ضاء الرحمن مروت کے مطابق سرچ آپریشن مکمل ہو گیا جس کے دوران حکومت کو انتہائی مطلو ب دوکمانڈرکو گرفتار کر لیا گیا،سرچ آپریشن سات گھنٹوں تک جاری رہا جس کے باعث پاک افغان شاہراہ مکمل طور بند رہی ،لوگ گھروں میں محصورہو کررہ گئے اور مسافروں کو شدید مشکلات کا سامنا پڑا۔اے پی اے جمرود ضاء الرحمن مروت نے میڈیا سے گفتگوکر تے ہو ئے کہا کہ علاقے میں امن وامان کی بحالی ہم سب کی ذمہ دار ی ہے اور کرفیو کے باعث عوام کو درپیش مشکلات پر معذرت خواہ ہیں۔ انہوں نے کہاکہ یہ سب عوام کے جان و مال کے تحفظ کیلئے کیا گیا ۔انہوں نے کہاکہ شہید اہلکاروں کا خون رائیگاں نہیں جائیگا۔

مزید : پشاورصفحہ اول


loading...