پنجاب ٹیچرز یونین کے زیر اہتمام دنیا پور میں احتجاجی مظاہرہ

پنجاب ٹیچرز یونین کے زیر اہتمام دنیا پور میں احتجاجی مظاہرہ

دنیاپور (نامہ نگار)یونائیٹڈ ٹیچر کونسل کی کال پر پنجاب ٹیچرز یونین کے زیر اہتمام پریس کلب دنیاپور کے سامنے احتجاجی مظاہرہ ہوا جس میں ضلع بھر کے سینکڑوں اساتذہ نے شرکت کی ۔پریس کلب کے سبزہ زار کو اساتذہ کے مطالبات پر مبنی بینرز سے سجایا گیا۔ مظاہرے کے شرکاء نے اپنے مطالبات پر مبنی کتبے ہاتھوں میں اٹھا رکھے تھے۔ اس موقع پر صدر ہیڈ ماسٹرز ایسوسی ایشن ضلع لودھراں (بقیہ نمبر35صفحہ12پر )

چوہدری فیاض سندھو نے خطاب کرتے ہوئے کہا کہ اساتذہ معاشرے کا سب سے باعزت طبقہ ہیں۔ ملکی ترقی کے لیے کوشاں ہیں۔ اساتذہ کا استحصال خصوصاً ہیڈ ماسٹر/ہیڈ ٹیچر کے ساتھ زیادتی ہرگز برداشت نہیں کریں گے ۔ سینئر ہیڈ ماسٹر/ہیڈ ٹیچر کے ساتھ زیادتی برداشت نہیں کریں گے ۔ سینئر ہیڈ ماسٹر بشیر احمد ہاشمی نے کہا کہ اساتذہ متحد ہو کر اپنے مسائل حل کرا سکتے ہیں۔ انہوں نے کہا کہ میرے سکول میں وزیر تعلیم خود بیٹھ جائیں یا کوئی بڑا بیوروکریٹ لے آئیں میرے جتنا رزلٹ نہیں دے سکتے ۔ جنرل سیکرٹری راؤ عبدالحکیم نے کہا کہ کچھ تنظیمیں اپنے کردار سے اساتذہ کی پیٹھ میں چھُرا گھونپ رہے ہیں اساتذہ انہیں پہچانیں ۔ چیئر مین نے UTCریاض حسین گھلو نے کہا کہ ہیڈ ماسٹر ز کے تبادلے ہرگز برداشت نہیں کریں گے ۔ سینئر صوبائی نائب صدر ملک سجاد اختر اعوان نے اپنے خطاب میں کہا کہ حکمران صرف زبانی جمع خر چ کر رہے ہیں تعلیم جیسے اہم شعبے پر کوئی توجہ نہیں دی جارہی ۔ قومی آمدنی کا صرف دو فیصد خرچ کرنا انتہائی شرمناک ہے ۔ انہوں نے مطالبہ کیا کہ قومی آمدنی کا کم از کم 7فیصد تعلیم پر خرچ کیا جائے ۔ پورے ملک میں ایک نصاب تعلیم پڑھایا جا ئے۔ تعلیم کو کمرشلائز اور پرائیویٹائز کرنے کا سلسلہ بند کیا جائے۔ ہیڈ ماسٹر ز کے تبادلہ جات فی الفور منسوخ کیے جائیں۔ ریشنالائزیشن کی آڑ میں بھیجے گئے پرائمری سکولوں میں ESTاساتذہ کو واپس اپنی جائے تعیناتی پر بھیجا جائے۔ نئی بھرتی کے ساتھ ان سروس پروموشن کے لیے پچاس فیصد پوسٹیں مختص کی جائیں۔ کنوینس الاؤنس کی زائد کٹوتی آئندہ تنخواہوں میں لگائی جائے ۔

احتجاجی مظاہرہ

مزید : ملتان صفحہ آخر


loading...