رجسٹری برانچ ملتان سٹی میں تعینات اہلکاروں نے سائلین کے ریکارڈ کو کمائی کا ذریعہ بنالیا

رجسٹری برانچ ملتان سٹی میں تعینات اہلکاروں نے سائلین کے ریکارڈ کو کمائی کا ...

ملتان(نمائندہ خصوصی) رجسڑی برانچ ملتان سٹی میں تعینات اہل کاروں نے سائلین کے ریکارڈ کو ہی کمائی کا ذریعہ بنا رکھا ہے ۔ 1سو سال پرانے اراضی مالکان کے ریکارڈ میں ٹمپرنگ (بقیہ نمبر16صفحہ12پر )

معمول بن چکا ہے۔ مقدمات ، گرفتاریاں اور درخواستوں پر ہونے والی کارروائیاں ان اہل کاروں کا قبلہ درست کرنے میں ناکام ہو چکی ہیں ۔ بعض اہل کاروں نے ریکارڈ روم میں اپنے دیہاڑی دار، مزدور تعینات کررکھے ہیں پرائیویٹ افراد کی ریکارڈ تک رسائی کیوجہ سے جائیدادوں کے سرکاری ریکارڈ میں ردوبدل معمول بن چکا ہے۔ زمہ دار افسران کھربوں روپے مالیت کے ریکارڈ کے تحفظ کی بجائے کرپٹ اہل کاروں کو معمول سرزنش کرکے سائلین کو ٹھنڈا کردیتے ہیں گزشتہ 5سالوں کے دوران درجنوں اراضی مالکان رجسڑی برانچ ملتان سٹی کے اہل کاروں کی جانب سے پیدا کردہ کانٹے صاف کرنے کیلئے عدالتوں میں دھکے کھارہے ۔ بتایا جاتا ہے رجسٹری برانچ ملتان سٹی میں تعینات زاہد نامی اہل کار نے سئلین سے ہتک آمیز رویہ اختیار کررکھا ہے۔ گالم گلوچ معمول بن چکا ہے۔ اس ریکارڈ میں ملتان شہر کا قیمتی ریکارڈ موجود ہے۔ آئے روز اس برانچ میں نقول کیلئے آنے والے سائلین کو ذلت آمیز رویہ کا سامنا کرنا پڑتا ہے، ارجنٹ رجسٹری کی مصدقہ نقول کے حصول کیلئے منہ مانگی رشوت ادا کرنا پڑتی ہے۔ جبکہ پی ٹی ون کی رجسٹری کی مصدقہ کاپی حاصل کرنے کیلئے پاپڑ بیلنے پڑتے ہیں 10سال پرانی رجسٹری کی نقل حاصل کرنے کیلئے کئی کئی دن انتظار کروایا جاتا ہے25سال پرانی رجسٹری کی نقل حاصل کرنے کیلئے زاہد نامی اہل کارکو 10ہزار سے 15ہزار ادا کرنا ضروری ہے ۔ احتجاج پر سائلین کو کھلی دھمکیاں دیتا نظر آتا ہے ۔ معلوم ہوا سب رجسٹرار ملتان سٹی کی بے قاعدگیوں پر پردہ ڈالنے کیلئے یہ اہل کار آگے آگے نظر آتا ہے ۔ ایسی سینکڑوں رجسٹریوں کی کاپیاں غائب ہو چکی ہیں جن میں لاکھوں روپے کا ٹیکس غبن ہے۔ اگر کوئی شہری ان رجسٹریوں کی نقول کا تقاضا کرے تو زاہد نامی یہ اہل کار اپنے پرائیویٹ افراد کے ذریعہ اس شہری کو مارنے پر تل آتا ہے۔ بتایاجاتا ہے پرائیویٹ افراد کیوجہ سے گزشتہ کئی سالوں سے رجسٹری برانچ کے اہل کاروں کو انٹی کرپشن اسٹبلیشمنٹ کے دفتر کے دھکے کھانے پڑے لیکن متعلقہ افسران زاہد سمیت دیگر اہل کاروں کو تبدیل کرنے کو تیار نہیں ہیں۔

رجسٹری برانچ

مزید : ملتان صفحہ آخر


loading...