لاہور ہائیکورٹ میں پسند کی شادی کرنے والی لڑکی اور ماں میں ہاتھا پائی

لاہور ہائیکورٹ میں پسند کی شادی کرنے والی لڑکی اور ماں میں ہاتھا پائی
لاہور ہائیکورٹ میں پسند کی شادی کرنے والی لڑکی اور ماں میں ہاتھا پائی

  


لاہور (مانیٹرنگ ڈیسک ) لاہور ہائیکورٹ میں پسند کی شادی کرنے والی لڑکی اور ماں میں ہاتھا پائی ہو گئی ۔

ایکسپریس نیوز کے مطابق لاہور کی رہائشی خاتون نے ہائیکورٹ میں درخواست دائر کر رکھی ہے جس میں کہا گیا ہے کہ اسکی بیٹی نے پسند سے شادی نہیں کی بلکہ اسے اغواءکیا گیا ہے ۔ آج عدالت میں پیشی کے دوران ماں اور بیٹی کا آمنا سامنا ہو گیا اور خاتون نے بیٹی کو ساتھ لیجانے کیلئے اسرار کیا جس پر دونوں میں ہاتھا پائی ہو گئی ۔

عمران خان کے نکاح اور بچے بھی۔۔۔نواز لیگ کے اہم رہنما نے ایسی بات کہہ دی کہ کپتان کو شدید غصہ آئے گا

ذرائع کا کہنا ہے کہ خاتون نے بیٹی کو گھسیٹتے ہوئے احاطہ عدالت سے باہر لیجانے کی کوشش کی جس پر لڑکی نے بھی مزاحمت کی اور اپنے خاوند کے ساتھ جانے پر اسرار کیا ۔

لڑکی نے عدالت میں بھی بیان دیا ہے کہ اسے اغواءنہیں کیا گیا بلکہ اس نے اپنی مرضی اور پسند سے شادی کی ہے اور اپنے شوہر کیسا تھ ہی رہنا چاہتی ہے تاہم اس بیان پر خاتون نے کمرہ عدالت سے باہر آتے ہی بیٹی پر دھاوا بول دیا اور اس پر تشدد کیا ۔ دونوں ماں بیٹی کئی منٹ تک ہاتھا پائی کرتی رہی جس کے بعد خواتین نے بیچ بچاﺅ کرا دیا اور لڑکی اپنے شوہر کیساتھ چلی گئی ۔

مزید : لاہور


loading...