ملیر 15پر مذہبی جماعتوں کا دھرنا ، نیشنل ہائی وے کو بند کر دیا گیا ، ایس ایس پی مذاکرات کیلئے مظاہرین کے پاس پہنچ گئے

ملیر 15پر مذہبی جماعتوں کا دھرنا ، نیشنل ہائی وے کو بند کر دیا گیا ، ایس ایس پی ...
ملیر 15پر مذہبی جماعتوں کا دھرنا ، نیشنل ہائی وے کو بند کر دیا گیا ، ایس ایس پی مذاکرات کیلئے مظاہرین کے پاس پہنچ گئے

  


کراچی (مانیٹرنگ ڈیسک )کراچی کے علاقے ملیر 15پر مذہبی جماعتوں کے دھرنے سے نیشنل ہائی وے کے دونوں ٹریک بند ہو گئے جس سے شدید ٹریفک جام ہو گیا ۔ 

میڈیا رپورٹس کے مطابق کراچی میں ٹارگٹ کلنگ کے حالیہ واقعات کے بعد مجلس وحدت المسلمین کے رہنماؤں اور کارکنوں کی گرفتاریوں  کے خلاف ملیر 15پر مذہبی جماعتوں کے سینکڑوں کارکنوں نے دھرنا دے رکھا ہے ، کارکنوں نے احتجاج کرتے ہوئے نیشنل ہائی وے کے دونوں ٹریک بند کر دیے جس سے ٹریفک مکمل طور پر جام ہو گیا ۔

ذرائع کا کہنا ہے کہ ایس ایس پی کورنگی مظاہرین سے مذاکرات کرنے کیلئے نیشنل ہوئی وے پر پہنچ گئے ہیں جنہیں دیکھتے ہی مظاہرین نے نعرے بازی شروع کر دی اور انہیں گھیر لیا ۔ پولیس اور مجلس وحدت المسلیمین کی قیادت میں مذاکرات کا سلسلہ جاری ہیں۔

ذرائع کے مطابق احتجاجی مظاہرین کو دیکھتے ہوئے پولیس کی بھاری نفری طلب کر لی گئی ہے اور پولیس کی جانب سے شیلنگ بھی کی گئی ہے ۔

کارکنوں کے احتجاج کی وجہ سے نیشنل ہائی وے پر گاڑیوں کی لمبی قطاریں لگ گئی ہیں اور شہریوں کو شدید مشکلات کا سامنا ہے جبکہ علاقے میں واقع سکولوں میں بھی چھٹی کر دی گئی ہے ۔

دھرنے کے شرکا نے ٹرین بھی روک لی تاہم پولیس کے ساتھ مذاکرات کے بعد ٹرین کو روانہ کردیا گیا البتہ نیشنل ہائی وے پر دھرنا جاری ہے۔ پولیس نے دھرنے کے کے شرکا کو منتشر کرنے کے لئے شیلنگ کی، چار مظاہرین کو گرفتار بھی کرلیا گیا ہے۔

مزید : کراچی


loading...