نوجوان لڑکی کو غلطی سے اس کے ہم جماعتوں نے واٹس ایپ گروپ میں ڈال دیا، اُدھر اس کے بارے میں لڑکے کیا باتیں کررہے تھے؟ پڑھتے ہی زندگی کا سب سے زوردار جھٹکا لگ گیا، جان کر کسی کا بھی چہرہ شرم سے لال ہوجائے

نوجوان لڑکی کو غلطی سے اس کے ہم جماعتوں نے واٹس ایپ گروپ میں ڈال دیا، اُدھر اس ...
نوجوان لڑکی کو غلطی سے اس کے ہم جماعتوں نے واٹس ایپ گروپ میں ڈال دیا، اُدھر اس کے بارے میں لڑکے کیا باتیں کررہے تھے؟ پڑھتے ہی زندگی کا سب سے زوردار جھٹکا لگ گیا، جان کر کسی کا بھی چہرہ شرم سے لال ہوجائے

  


سڈنی(مانیٹرنگ ڈیسک) آسٹریلیا کی میلبرن یونیورسٹی کے طالبعلموں نے اپنی ہم جماعت لڑکی کو ایک ایسے واٹس ایپ گروپ میں ڈال دیا جس میں نوجوان خود اسی کے متعلق انتہائی فحش اور غلیظ باتیں کر رہے تھے۔ اپنے متعلق اپنے ہی ہم جماعتوں کے پیغامات پڑھ کر لڑکی کو زندگی کا سب سے بڑا جھٹکا لگ گیا۔ میل آن لائن کی رپورٹ کے مطابق 22سالہ الینر ہنری کو جب گروپ میں شامل کیا گیا تو وہاں تمام لڑکے اپنے ایک ہم جماعت نوجوان کو اکسا رہے تھے کہ وہ الینر کے ساتھ تعلقات استوار کرے۔ ساتھ ہی وہ الینر کی تصاویر بھی گروپ میں شیئر کر رہے تھے۔ نوجوان پوچھ رہا تھا کہ کیسے؟ اس کے جواب میں تمام لڑکے اسے انتہائی فحش طریقے بتارہے تھے اور اس نوجوان کو کہہ رہے تھے کہ ن طریقوں سے وہ الینر کو پھانس سکتا ہے۔

بنا جنسی عمل کے حاملہ ہونے کا دعویٰ کرنے والی نوجوان لڑکی کو لوگ زبردستی پکڑ کر ڈاکٹر کے پاس لے گئے، ڈاکٹر نے معائنہ کیا تو پیٹ میں ایسی چیز نظر آگئی کہ ہر کوئی دم بخود رہ گیا

رپورٹ کے مطابق الینرنے جب ان کی چیٹنگ پڑھی تو اسے شدید جھٹکا لگا اور اس نے انہیں سبق سکھانے کے لیے تمام گفتگو کے سکرین شاٹس لے کر فیس بک پر شیئر کر دیئے۔ جب ان لڑکوں کو معلوم ہوا کہ الینر بھی گروپ میں شامل تھی اور وہ سب جان گئی ہے تو اس سے معاشقہ چلانے کا خواہش مند ہم جماعت اس سے معافیاں مانگنے لگا اور کہنے لگا کہ ”میں تو تمہیں ٹھیک سے جانتا بھی نہیں ہوں، یہ تو وہ دوسرے لڑکوں کی شرارت ہے، وہی مجھے اکسا رہے تھے اور فحش باتیں کر رہے تھے۔“ تاہم الینر اسے معاف نہیں کرتی اور کہتی ہے کہ تم نے جوکیا بہت غلط کیا۔

ضرور پڑھیں: ڈالر سستا ہو گیا

مزید : ڈیلی بائیٹس


loading...