” اس نے مجھے گھر کھانے پر بلایا جہاں اس کے تین اور دوست تھے جنہوں نے مجھے زیادتی کا نشانہ بنایا اور پھر۔۔ “ نوجوان لڑکی نے پولیس سٹیشن پہنچ کر خوفناک انکشاف کر دیا

” اس نے مجھے گھر کھانے پر بلایا جہاں اس کے تین اور دوست تھے جنہوں نے مجھے ...
” اس نے مجھے گھر کھانے پر بلایا جہاں اس کے تین اور دوست تھے جنہوں نے مجھے زیادتی کا نشانہ بنایا اور پھر۔۔ “ نوجوان لڑکی نے پولیس سٹیشن پہنچ کر خوفناک انکشاف کر دیا

  

ممبئی (ڈیلی پاکستان آن لائن )چار لڑکوں نے لڑکی کو پارٹی میں بلانے کا جھانسہ دے کر خالی فلیٹ میں لے جا کر اجتماعی زیادتی کا نشانہ بنا ڈالا ۔

تفصیلات کے مطابق لڑکی نے اپنی والدہ کے ساتھ پولیس سٹیشن میں جاکر رپورٹ درج کروا دی ہے جس میں موقف اختیار کیاہے کہ چار لڑکوں نے اسے دہلی کے علاوہ اشوک نگر میں پارٹی میں دھوکہ سے بلا کر باری  باری زیادتی کا نشانہ بنایا ۔ لڑکی کا دعویٰ ہے کہ چاروں لڑکوں کی جانب سے اسے خالی فلیٹ میں پورا دن قید رکھا گیا اور باری باری زیادتی کانشانہ بنا تے رہے جبکہ اس کے ساتھ انہوں نے ویڈیو بھی بنائی اور چھوڑنے سے پہلے دھمکی دی کہ میں نے اگر کسی کو اس بارے میں بتایا تو وہ میری ویڈویو انٹرنیٹ پر ڈال دیں گے ۔پولیس نے تحقیقات کا آغاز کر دیا ہے ۔

لڑکی نے پولیس کو تفصیلات سے آ گاہ کرتے ہوئے بتایا کہ اس کے ایک دوست نے اسے کھانے پر اپنے گھر بلایا اور کہا کہ وہاں پر اس کے دیگر دوست بھی ہوں گے ، جس پر میں نے یہ سوچ کر رضامندی ظاہر کر دی کہ وہاں میری دیگر سہیلیاں بھی ہوں گی ۔لیکن جب میں وہاں پہنچی تو وہاں پر کوئی بھی اور لڑکی نہیں تھی جبکہ اس کے ساتھ تین اور لڑکے وہاں موجود تھے ۔

لڑکی کا کہناہے کہ انہوں نے پہلے مجھے شراب پلائی اور اس کے بعد باری باری زبردستی جنسی زیادتی کا نشانہ بنانا شرو ع ہو گئے ۔ لڑکی کا کہناہے کہ وہ جب گھر پہنچی تو بہت زیادہ ڈری ہوئی تھی اور عادات میں تبدیلی کو محسوس کرتے ہوئے والدہ نے دباﺅ ڈال کر پوچھا تو میں نے انہیں ساری صورتحال سے آ گاہ کیا جس کے بعد انہوں نے اس واقع کے بارے میں والد کو بتایا ۔

پولیس نے لڑکی کی شکایت پر مقدمہ درج کرتے ہوئے لڑکوں کی تلاش کیلئے ٹیم تشکیل دیدی ہے ۔ لڑکی کو ریپ کا نشانہ بنانے والوں میں سے ایک لڑکے کا والد رکشہ ڈرائیو رہے ۔

مزید : جرم و انصاف