مقبوضہ کشمیر کے عوام کو حق خودار ادیت دلانے کیلئے عالمی برادری بھارت پر دباﺅڈالے : فاروق حیدر

مقبوضہ کشمیر کے عوام کو حق خودار ادیت دلانے کیلئے عالمی برادری بھارت پر ...

  



برسلز(این این آئی)وزیراعظم آزاد جموں و کشمیر راجہ فارق حیدر خان نے کہاہے کہ بھارت نے مقبوضہ کشمیر کی خصوصی حیثیت ختم اور اسے دو حصوں میں تقسیم کر کے اقوام متحدہ کی قراردادں کی سنگین خلاف ورزی کی ہے۔ انہوں نے کہا کہ گزشتہ تین ماہ سے جاری بھارتی محاصرے کی وجہ سے کشمیری عوام اس وقت شدید مصائب و مشکلات سے دوچار ہیں۔ کشمیر میڈیاسروس کے مطابق راجہ فاروق حیدر خان نے ان خیالات کا اظہار کشمیر یورپی یونین ویک کے آغاز پر یورپی پارلیمینٹ برسلز میں ایک پریس کانفرنس کے دوران کیا۔ انہوں نے کہا کہ بھارت نے پانچ اگست کے غیر قانونی اور یکطرفہ اقدام کے بعد سے مقبوضہ کشمیرمیںہزاروں افراد کو گرفتار کرکے جیلوں اور عقوبت خانوں میں بھیج دیا ہے جبکہ سخت محاصرے اور پابندیوں کی وجہ سے کشمیریوں کوبنیادی اشیائے ضروریہ کی شدید قلت کا سامنا ہے۔ راجہ فاروق حیدر خان نے کہا کہ آزاد کشمیر کے شہری بھی بھارتی جبر و استبداد سے محفوظ نہیں اور بھارتی گولہ باری کی وجہ سے لائن آف کنٹرول کے قریب رہنے والے 20 ہزار کے قریب باشندے محفوظ مقامات پر منتقل ہوئے ہیں۔ انہوں نے کہا کہ وہ بھارت کے غاصبانہ اور جابرانہ اقدامات کے خلاف دنیا کے ہر فورم پر آواز اٹھائیں گے۔ وزیر اعظم آزاد کشمیر نے عالمی برادری خاص طور پر مغربی ملکوں پر بھی زور دیا کہ وہ کشمیریوں کوحق خود ارادیت دلانے کیلئے کردار ادا کریں۔ رکن یورپی پارلیمنٹ شفق محمد نے پریس کانفرنس سے اپنے خطاب میں کہا کہ بھارت کی ہٹ دھرمی کی وجہ سے کشمیری سخت مشکلات سے دوچار ہیں اور کنٹرول لائن کے آر پار تقسیم ہو کر رہ گئے ہیں ۔ کشمیرکونسل یورپی یونین کے چیئرمین علی رضا سید نے اس موقع پر کہا کہ یورپی پارلیمنٹ میں کشمیر کی سالانہ ہفتہ روزہ تقریبات گذشتہ ایک دہائی سے منائی جاتی ہیں جس کا مقصد تنازع کشمیر کے حقائق کو دنیا کے سامنے لانا ہے۔ انھوں نے کہاکہ مقبوضہ کشمیر کے لوگ تین ماہ سے محاصرے میں ہیں لہذا عالمی برادری خصوصا یورپی یونین کو چاہیے کہ مظلوم کشمیریوں کی مدد کرے اور ان پرجاری بھارتی مظالم کو رکوائے۔ کشمیر یورپی یونین ویک کی تقریبات کل تک جاری رہیں گی۔

راجہ فاروق حیدر

مزید : علاقائی