اسلام آباد ہائی کورٹ نے وفاقی نظامت تعلیمات کو نئی پروموشن سے روک دیا

اسلام آباد ہائی کورٹ نے وفاقی نظامت تعلیمات کو نئی پروموشن سے روک دیا

  



اسلام آباد(صباح نیوز)اسلام آباد ہائی کورٹ کے جسٹس عامر فاروق نے نئے سروس رولز کے خلاف متعدد کیسوں کی سماعت کے دوران اساتذہ کی نئی پروموشن پر حکم امتناعی جاری کرتے ہو ئے محکمے کو حکم دیا ہے کہ آئندہ فیصلے تک کسی قسم کی پروموشن نہ کی جائے۔اسلام آباد ہائی کورٹ میں نئے سروس رولز کے خلاف دائر کیسوں کی سماعت جسٹس عامر فاروق نے کی پٹیشنرز کی طرف سے ایڈووکیٹ جی ایم چوہدری پیش ہوئے جبکہ محکمے کی طرف ڈپٹی اٹارنی جنرل راجہ خالد,ڈپٹی ڈائریکٹر ملک مسعود الحمیداور ریحان نقوی پیش ہوئے۔دوران سماعت عدالت عالیہ نے محکمے سے استفسار کیا کہ عدالت میں کیس ہونے کے باوجود معاملے کو الجھانے کے لئے مذید ترقیاں کیوں کی گئی ہیں جس کے جواب میں ڈپٹی ڈائریکٹر لیگل وزارت تعلیم ملک مسعود الحمید نے کہا کہ عدالت کے حکم پر جون میں ترقیاں کی گئی تھیں جس پر جسٹس عامر فاروق نے حیرانگی کا اظہار کرتے ہوئے کہا کہ کیا میں نے کہا تھا کہ سب ترقیاں کر دی جائیں انہوں نے سخت نوٹس لیتے ہوئے کہا کہ محکمے کے اس عمل کی وجہ سے کیوں نہ کسی ایک کو اڈیالہ جیل بھیج دیا جائے اور ساتھ ہی بھاری جرمانہ بھی کیا جائے۔

اسلام آباد ہائی کورٹ

مزید : علاقائی