آصٖف زرداری کو طبی سہولیات فراہم نہ کرنا غیر انسانی عمل ہے: مرتضی وہاب

آصٖف زرداری کو طبی سہولیات فراہم نہ کرنا غیر انسانی عمل ہے: مرتضی وہاب

  



کراچی(اسٹاف رپورٹر)ترجمان سندھ حکومت اور وزیر اعلی سندھ کے مشیر قانون، ماحولیات و ساحلی ترقی بیرسٹر مرتضی وہاب نے سندھ اسمبلی کے کمیٹی روم میں پریس کانفرنس کرتے ہوئے کہا کہ پاکستان کے سابق صدر اور رکن قومی اسمبلی آصف علی زرداری کو طبی سہولیات سے محروم کرنا بنیادی انسانی حقوق کی خلاف ورزی ہے جس کی میں شدید الفاظ میں مذمت کرتا ہوں۔ آصف علی زرداری کو ان کی مرضی کے ڈاکٹر تک رسائی دی جائے کیونکہ یہ ان کا اور ہر پاکستانی کا حق ہے۔ ترجمان سندھ حکومت نے وفاقی حکومت پر کڑی تنقید کرتے ہوئے کہا کہ حکومت ہوش کے ناخن لے اور آئین کی روگردانی سے گریز کرے۔ انہوں نے کہا کہ سندھ حکومت نے کامیابی کا ایک اور سنگِ میل عبور کیا ہے۔ سندھ ٹرانسمیشن ڈسپیج کمپنی (STDC) کو پاکستان کی پہلی صوبائی ٹرانسمیشن کمپنی بننے کا اعزاز حاصل ہوا ہے اگرچہ اس کمپنی کے قیام میں وفاق نے بہت روڑے اٹکائے مگر اب یہ کمپنی اپنی پیداوار کو نیشنل گرڈ میں شامل کرکے ملکی ترقی میں قدم بہ قدم ساتھ دے رہی ہے یہ کامیابی پورے سندھ کے عوام کی کامیابی ہے جس کا سہرا پاکستان پیپلز پارٹی کی وژنری قیادت کو جاتا ہے۔ انہوں نے کہا کہ گورنر سندھ دادو کے ضمنی انتخابات میں سیاسی روابط کو استعمال کرکے گورنر کی آئینی حدود سے تجاوز کرنے کے مرتکب ہورہے ہیں جو آئینِ پاکستان کی سنگین خلاف ورزی ہے اور میڈیا پر کہتے ہیں کہ میں نے کسی امیدوار سے ملاقات نہیں کی۔ صوبائی مشیر  نے کہا کہ گورنر سندھ نے اپنی گورنر شپ کے چودہ ماہ میں کوئی مثبت کام نہیں کیا اگر وہ اپنے عہدے کی قانونی حیثیت کو کام میں لاتے ہوئے گرین لائن پروجیکٹ، کراچی سرکلر ریلوے، کے فور پروجیکٹ اور این ایف سی کی واجب الادا رقوم سندھ کو دلانے میں اپنا مثبت کردار ادا کرتے تو سندھ کے عوام ان سے بہت خوش ہوتے مگر انہوں نے صرف باتیں ہی کی ہیں جو ان کی سیاسی جماعت تحریک انصاف کا پرانا وطیرہ ہے۔ صوبائی مشیر نے گورنر سندھ کو کہا کہ وہ اپنی آئینی حدود سے تجاوز نہ کریں حالانکہ گورنر کی تنخواہ، رہائش، گاڑی اور مراعات کا تمام بوجھ سندھ حکومت ادا کرتی ہے مگر وہ سندھ دشمن اقدامات میں فریقین کا ساتھ دیتے ہیں انہیں چاہیئے کہ وہ سندھ کے نمک کا حق ادا کریں۔

مزید : صفحہ اول