پشاور،آئی جے ٹی کی کشمیریوں سے اظہار یکجہتی کیلئے ریلی

    پشاور،آئی جے ٹی کی کشمیریوں سے اظہار یکجہتی کیلئے ریلی

  



پشاور(سٹی رپورٹر)اسلامی جمعیت طلبہ یونیورسٹی جامعہ پشاور نے کشمیریوں کے ساتھ اظہار یکجہتی کیلئے اکیڈمک بلاک سے خیبر میڈیکل کالج تک ایک عظیم الشان ریلی نکالی گئی جس میں یونیورسٹی آف انجینئرنگ اینڈ ٹیکنالوجی پشاور، جامعہ پشاوراور جامعہ زرعیہ اور اسلامیہ کالج یونیورسٹی کے سینکڑوں طلبہ و طالبات نے شرکت کی۔ ریلی کے شرکاء پاکستان کا مطلب کیا لاالہ الااللہ اور کشمیر بنے گا پاکستان کے فلک شگاف نعرے لگا رہے تھے۔ ریلی کے شرکاء نے پلے کارڈز اور بینرز اٹھا رکھت تھے جس پر کشمریو ں کیساتھ یکجہتی کے نعرے درج تھے ریلی کی قیادت اسلامی جمعیت طلبہ کے ناظم کیمپس پشاور اول شیر خان، عماد نظامی، شفیق خان،،جنید شفیع اور سلمان بن احسان کررہے تھے۔ریلی سے خطاب کرتے ہوئے ناظم کیمپس اول شیر خان نے کہا کہ بھارتی فوج نے ستر سالوں نے کشمیر پر غاصبانہ قبضہ کرکے کشمیریوں پر ظلم و ستم کا سلسلہ شروع کررکھا ہے جبکہ بھارتی پارلیمنٹ نے آرٹیکل 370 اور آرٹیکل 35A کے خاتمہ سے کشمیرکی خودمختار حیثیت ختم کرکے اقوام متحدہ کی قراردادوں کا مذاق اڑایا ہے۔۔انھوں نے کہا کہ بھارتیہ جنتا پارٹی نے اس وقت پورے ہندوستان میں دہشت کی فضا قائم کررکھی ہے اور مسلمانوں کو ہندومذہب اختیار کرنے پر مجبور کیا جارہا ہے۔انہوں نے کہا کہ پوری سیاسی قیادت اس بات پر متفق ہے کشمیریوں کے حق کا فیصلہ کشمیریوں کے امنگوں اور اکثریت کے مطابق ہو کیونکہ کشمیر پاکستان کی شہ رگ ہے اور رہے گا اور کشمیریوں کے حق ارادیت کو ہر سطح پر سپورٹ کرینگے۔ انہوں نے مسئلہ کشمیر پر جاندار پالیسی نہ اپنانے پر حکومت کو تنقید کا نشانہ بناتے ہوئے کہا کہ وزیر اعظم مسئلہ کو عالمی سطح پر اجاگر کرنے کی بجائے سعودی ایران کی ثالثی میں مصروف ہے پارلیمنٹ کا مشترکہ اجلاس بلانے کی بجائے وزیر اعظم اپوزیشن کو جیلوں میں ڈالنے میں مصروف ہے تاہم ناقص حکومتی خارجہ پالیسی اور سفارت کاری کی وجہ سے پاکستان مسئلہ کشمیر پر مسلم ممالک کی حمایت سے حاصل نہ کرسکا۔انھوں نے کہا کہ کشمیر میں جاری نوے دنوں سے کرفیو نے دنیا کے سامنے انڈیا اور بھارت کا فاسسٹ چہرہ بے نقاب کردیا ہے۔انہوں نے حکومت سے مطالبہ کیا کہ مسئلہ کشمیر کو اجاگر کرنے کے لئے حکومت جامع اور جاندار پالیسی اختیار کریں۔

مزید : صفحہ اول