کٹھ پتلی حکومت کے ذریعے ملک کو دوبارہ نقصان پہنچایا جارہا ہے 

کٹھ پتلی حکومت کے ذریعے ملک کو دوبارہ نقصان پہنچایا جارہا ہے 

  



 ملتان (خبر نگار خصوصی)  چیئرمین پاکستان پیپلزپارٹی بلاول بھٹو زرداری نے کہا ہے کہ سابق صدر آصف علی زرداری کو کسی بھی ثبوت کے بغیرجیل میں رکھا ہواہے، یہ کیسے ممکن ہے جرم سندھ اور کراچی کا ہے لیکن ٹرائل راولپنڈی میں ہو رہا ہے، آج کے نئے پاکستان میں انصاف کے نظام کو مذاق بنایا ہوا ہے۔ اس وقت تک کوئی عوامی مسئلہ حل نہیں ہو سکتا جب تک سلیکٹڈ حکومت کا مسئلہ حل نہ ہو۔ان خیالات کا اظہار انہوں نے گزشتہ روز ہائیکورٹ بار ملتان کی جانب سے منعقدہ تقریب سے خطاب کرتے ہوئے کیا۔انہوں نے مزید کہا کہ بار نے مجھے موقع دیا کہ میں یہاں آکر اظہار خیال کر سکوں۔2019 میں جمیوریت انصاف اور عدلیہ میں انصاف کے لیئے سوچتے ہیں تو پاکستان میں انصاف اور عدلیہ کا پیمانہ ہے وہ پیپلز پارٹی سے جدا نہیں۔ ہم اپنے ججز اور وکلاء کا احترام کرتے ہیں۔ بہادر وکلاء  اور بہادر ججز اپنے اصولوں جمہوریت اور انصاف کی خاطر اپنی جانیں خطرے میں ڈالتے ہیں۔ آزاد عدلیہ پیپلزپارٹی کی جدوجہد کے بغیر ناممکن تھی۔سابق صدر زرداری آج بھی جیل میں ہیں۔لیکن ان کے خلاف کوئی جرم ثابت نہیں ہے، شہید ذوالفقار علی بھٹو کو پھانسی بھی راولپنڈی میں دی جاتی ہے۔ بے نظیر بھٹو کو پنڈی میں شہید کیا جاتا ہے۔اور ہمارے خلاف کیسز پنڈی میں بنائے جاتے ہیں۔انہوں نے کہا کہ چئیرمین نیب کے غیر جانبدار رہنے پر حکومت گرجانے کے بیان پر کیوں تفتیش نہیں کی جاتی،اس ملک کی عوام سے شہید ذوالفقار علی بھٹو جیسے ایماندار لیڈر چھین لئے گئے۔ آمروں نے ملک کی جڑیں ہلا دی ہیں۔اس کٹھ پْتلی حکومت کے ذریعے دوبارہ ملک کو نقصان پہنچایا جا رہا ہے،انہوں نے کہا کہ پیپلز پارٹی نے جمہوری نظام کے لیئے ہمیشہ قربانی دی ہے اور دیتے رہیں گے۔ہماری قیادت کے خلاف سیاسی مقدمات چلائے جا ریے ہیں۔ہماری لیڈر شب کو بیماریوں کے باوجود جیل میں ڈالا جارہا ہے۔جب ہم بات کرنے کیلئے ہی آزاد نہیں تو اپنے مسائل کا حل کیسے نکال سکتے ہیں۔آپ تاریخ کے شاہد ہو اور دیکھ رہے ہو کہ اب کیا ہو رہا ہے۔ اگر ہم ماضی کی طرح ان قوتوں کا مقابلہ کریں تو ہم اپنے بچوں کا مستقبل بچا سکتے جمہوریت اور وفاق کو بچا سکتے ہیں۔ میں وکلاء اور عدالتوں سے مدد کی اپیل کرتا ہوں۔ مظفر گڑھ جلسہ میں پیپلز پارٹی اپنی سیاسی قوت دکھائی گی اور سیاسی پیغام دے گی۔صدر ہائیکورٹ بار ملتان ملک حیدر عثمان نے کہا کہ ہائیکورٹ بار ملتان 1989ء میں محترمہ بے نظیر بھٹو کی حکومت کا دیا ہوا تحفہ ہے۔ میری نظر میں بلاول بھٹو زرداری آئندہ کے وزیراعظم ہوں گے۔انہوں نے کہا کہ تعلیم کا معیار بہتر ہوگا تو ملک ترقی کریگا۔ اٹھارویں ترمیم میں بہت سارے محکمے صوبوں کو دے دئے گئے۔ان محکموں کی کارکردگی کا جائزہ لینا ضروری ہے۔جہاں تعیلم کا معیار بہتر ہو گا وہاں ترقی ہوگی۔ہماری تعیلم کی بری حالت ہے۔ نظام تعلیم ایک نہیں ہے۔تقریب میں  سابق وزیر اعظم یوسف رضا گیلانی،سابق گورنر پنجاب مخدوم احمد۔،رکن صؤبائی اسمبلی علی حیدر گیلانی کے علاوہ وکلاء کی کثیر تعداد نے شرکت کی۔ جبکہ اسٹیج سیکرٹری کے فرائض میاں ارشد وقاص چھجڑا نے انجام دیے۔ تلاوت قرآن پاک حافظہ حفظہ رحمن اور ہدیہ نعت قارب نوید ہاشمی نے پیش کی۔ پاکستان پیپلز پارٹی کے چئیرمین بلاول بھٹو زرداری کے ہائیکورٹ بار ملتان آمد کے موقع پر سیکورٹی کے سخت انتظامات کیے گئے تھے۔ہائیکورٹ بار کی جانب آنے والے راستے کو بیرئیر لگا کر عام ٹریفک کے لیے بند رکھا گیا۔جبکہ بار کی حدود میں پارکنگ کی اجازت نہ دی گئی۔ہائیکورٹ بار کے مرکزی دروازوں پر واک تھرو گیٹس بھی نصب کیے گئے تھے۔اور بار آنے والے افراد کو چیکنگ کے بعد اند داخل ہونے کی اجازت دی گئی۔ ہائیکورٹ بار ملتان کی جانب سے پاکستان پیپلز پارٹی کے چئیرمن بلاول بھٹو زرداری کے اعزاز میں منعقدہ تقریب  بدنظمی کا شکار رہی۔تقریب کے آغاز سے ہی وکلاء نے سٹیج کو گھیرے رکھا۔اور سٹیج سے وکلاء کو نشستوں پر بیٹھنے کے لیے بار بار اعلانات کئے جاتے رہے۔مگر وکلاء سٹیج کے سامنے ہی موجود رہے۔بلاول بھٹو کے خطاب کے دوران وکلاء  نعرے بازی بھی کرتے رہے۔اور سیلفیاں بھی لیتے رہے۔تقریب کے اختتام پر بلاول بھٹو نے وکلاء سے ملاقات بھی کی۔۔چیئرمین پاکستان پیپلز پارٹی بلاول بھٹو زرداری نے کہا ہے کہ خواتین پیپلزل پارٹی کا ہراول دستہ ہیں اور پیپلز پارٹی ہی وہ واحد سیاسی جماعت ہے جو خواتین کو نہ صرف عزت و احترام دیتی ہے بلکہ پارٹی میں متحرک کردار کیلئے مواقع بھی یکسر فراہم کئے جاتے ہیں۔ انہوں نے کہا کہ جنوبی پنجاب میں پارٹی سے وابستہ خواتین کی سرگرمیاں حوصلہ افزاء ہونے کے ساتھ ساتھ خواتین کی جدوجہد مزید تیز کرنے کی اشد ضرورت ہے ہم ہر سطح پر خواتین کی سرپرستی و رہنمائی مسلسل جاری رکھیں گے۔ ان خیالات کا اظہار انہوں نے سابق وزیر اعظم پاکستان سید یوسف رضا گیلانی کی موجودگی میں پاکستان پیپلز پارٹی شعبہ خواتین ملتان شہر کی صدر عابدہ حسین بخاری سے ملاقات کے موقع پر کیا۔ اس موقع پر عابدہ حسین بخاری نے شعبہ خواتین ملتان شہر کی سرگرمیوں اور کارکردگی سے چیئرمین بلاول بھٹو زرداری کو تفصیلی طور پر آگاہ کیا اور بتایا کہ جنوبی پنجاب کی خواتین کارکن اور تمام عہدیدار خواتین پارٹی کے مشن کے مطابق اپنی جدوجہد جاری رکھے ہوئے ہیں خصوصاً ملتان شہر میں خواتین کی تنظیم سازی اور بہتر ورکنگ ریلیشن شپ سے خواتین کو متحد و منظم کیا جارہا ہے۔ عابدہ حسین بخاری نے مزید کہا کہ پارٹی کی ہر کال پر کسی بھی قسم کی جدوجہد کیلئے صف اول میں ہوں گی اس موقع پر چیئرمین بلاول بھٹو زرداری نے عابدہ حسین بخاری کو شاباش دی اور کہا کہ وہ اسی تندہی کے ساتھ اپنی سیاسی جدوجہد کو جاری رکھنے کے ساتھ ساتھ خواتین کو منظم و متحرک رکھنے میں اپنا کردار جاری رکھیں۔

بلاول بھٹو 

مزید : صفحہ اول