مولانا فضل الرحمان کے دست راست اور رہبر کمیٹی کے سربراہ اکرم درانی نیب کے ریڈار پر ،بڑا حکم جاری کر دیا گیا

مولانا فضل الرحمان کے دست راست اور رہبر کمیٹی کے سربراہ اکرم درانی نیب کے ...
مولانا فضل الرحمان کے دست راست اور رہبر کمیٹی کے سربراہ اکرم درانی نیب کے ریڈار پر ،بڑا حکم جاری کر دیا گیا

  



راولپنڈی(ڈیلی پاکستان آن لائن)نیب راولپنڈی نے رہبر کمیٹی کے سربراہ اور جمعیت علمائے اسلام ف کے مرکزی رہنما اکرم خان درانی کوہاوَسنگ فاوَنڈیشن کیس میں کل طلب کرلیا،سابق وزیراعلیٰ خیبرپختونخوا اکرم درانی کوچوتھی بارطلب کیاگیاہے۔

نجی ٹی وی کے مطابق مولانا  فضل  الرحمان کے انتہائی قریبی رشتہ دار اور جمعیت علمائے اسلام ف کے مرکزی رہنما محمد اکرم خان درانی کو قومی احتساب بیورو نے چوتھی مرتبہہاوَسنگ فاوَنڈیشن کیس میں طلب کر لیا ہے،یاد رہے کہ اکرم خان درانی21نومبرتک عبوری ضمانت پرہیں۔سابق وزیر اعلیٰ خیبر پختونخوا اکرم خان درانی رہبر کمیٹی کے سربراہ ہیں اور حکومتی  کمیٹی کے ساتھ ان کی سربراہی  میں اپوزیشن کے ساتھ مذاکرات بھی ہو رہے ہیں۔اکرم درانی کےخلاف غیرقانونی بھرتیاں اورآمدن سےزائداثاثہ جات کاکیس نیب میں زیر تفتیش ہے جبکہ انہیں ہاوَسنگ فاوَنڈیشن کیس میں طلب کیاگیا ہے۔اس سے پہلےغیرقانونی بھرتی کیس میں 2 سرکاری افسربھی گرفتارہوچکےہیں،گرفتارہونےوالوں میں مختاربادشاہ اورعاطف ملک شامل ہیں،زیرحراست ملزم مختاربادشاہ پی ڈبلیوڈی کےچیف ایڈمن آفیسر ہیں ،ملزمان پر الزام ہے کہ انہوں نےغیرقانونی طریقےسےبھرتیاں کی تھیں۔

یاد رہے کہ آج ہی رہبر کمیٹی کے اجلاس کے بعد میڈیا سے گفتگو کرتے ہوئے اکرم خان درانی نے کہا ہے کہ  دو دن بعد آزادی مارچ نیا رخ اختیار کرے گا، تین تجاویز پر غور کررہے ہیں،آزادی مارچ 2 دن بعد نیا رخ اختیار کرے گا، ہم 3 تجاویز پر غور کررہے ہیں، کارکنان پرعزم ہیں، وہ ایک ماہ بھی رہنےکو تیار ہیں، کچھ پتے اپنے پاس بھی رکھیں گے، سارے پتے نہیں دکھائیں گے۔انہوں نے کہا کہرہبرکمیٹی کو اعتماد میں لیے بغیر کوئی فیصلہ نہیں کریں گے، کمیٹی ابھی تک وزیراعظم کےاستعفے  پر ڈٹی ہوئی ہے، اجلاس میں تمام اپوزیشن جماعتوں نےاتفاق کیا کہ حکومت پر دباؤ بڑھایا جائے، کارکنان کیلئے ٹینٹ اور  کھانے پینےکا بندوبست کیا جارہا ہے۔

مزید : اہم خبریں /قومی