نواز شریف اور مریم نواز بیرون ملک کب جا رہے ہیں؟خبر رساں ادارے نے تہلکہ خیز دعویٰ کر دیا

نواز شریف اور مریم نواز بیرون ملک کب جا رہے ہیں؟خبر رساں ادارے نے تہلکہ خیز ...
نواز شریف اور مریم نواز بیرون ملک کب جا رہے ہیں؟خبر رساں ادارے نے تہلکہ خیز دعویٰ کر دیا

  



اسلام آباد(صباح نیوز)سول حکومت دیکھتی رہ گئی کچھ بااثر حلقوں کے کردار کے باعث سابق وزیراعظم نواز شریف اپنی صاحبزادی مریم نواز کے ہمراہ  علاج کے لئے جلد لندن روانہ ہو جائیں گے ،تمام معاملات طے پا گئے مریم نواز بیرون ملک علاج کے بعد واپس اپنے ملک کی سیاست میں سرگرم کردار ادا کریں گی۔

ذرائع کے مطابق نواز شریف کے علاج کے لئے قائم میڈیکل بورڈ نے ان کے بیرون ملک علاج کی سفارش کردی ہے۔ اہلخانہ نے بھی بیرون ملک علاج کیلیے نوازشریف کو رضا مند کرلیا ہے۔ ذرائع کا کہناہے کہ نوازشریف کے پلیٹ لیٹس میں مسلسل کمی کی اب تک تشخیص نہیں ہوسکی۔ ادویات اورانجیکشن کے باوجود پلیٹ لیٹس کا مسلسل کم رہنا خطرناک اندرونی بیماری کاباعث ہوسکتا ہے۔ذرائع کے مطابق اہلخانہ نے بیرون ملک علاج کیلیے نوازشریف کو رضا مند کرلیا ہے۔واضح رہے کہ اس سے قبل سابق وزیراعظم نواز شریف علاج کیلیے بیرون ملک جانے میں مسلسل ہچکچاہٹ کا شکاررہے،ذرائع کے مطابق سابق وزیر اعظم نوازشریف کی وطن واپسی کے وقت کچھ حلقے ان کی صاحبزادی کی سیاست میں حصہ لینے پر راضی نہیں تھے جیل میں اسیری کے دورا ن کچھ مخصوص حلقے نواز شریف سے ملتے اور رابطوں میں رہے اور انہیں بیرون ملک جانے کیلئے قائل کرتے رہے تاہم یہ حلقے اس وقت نوازشریف کی صاحبزادی مریم نواز کی سیاست میں حصہ لینے کے لئے راضی نہیں ہورہے تھے یہی بنیادی وجہ تھی کہ نوازشریف بیرون ملک جانے کیلئے تیار نہیں تھے۔

صباح نیوز کو ذرائع سے معلوم ہوا ہے کہ اب یہ حلقے مریم نواز کی سیاست میں کردار ادا کرنے کیلئے راضی ہوگئے ہیں، ان مخصوصں حلقوں کے مسلسل رابطوں اور ملاقاتوں سے سابق وزیراعظم نوازشریف اب بیرون ملک جانے پر تیار ہوگئے ہیں جہاں وہ اپنا  اعلاج کرائیں گے جبکہ ان کی صاحبزادی مریم نواز ان کے ہمراہ ہونگی ۔ذرائع نے انکشاف کیا ہے کہ نوازشریف کے مکمل علاج  اور حالت بہتر ہونے کے بعد مریم نواز واپس وطن لوٹیں گی اور پاکستان کی سیاست میں سرگرم کردار اداکریں گی، اگرچہ سول حکومت آخری وقت تک نوازشریف کی بیرون ملک جانے کی مخالفت کرتی رہی اور وزیر اعظم این آر او نہ دینے کی بات کرتے رہے لیکن سول حکومت دیکھتی ہی رہ گئی ا ور کسی اور سے نواز شریف کی اپنی صاحبزادی مریم نواز کے ہمراہ علاج کے لئے بیرون ملک جانے کیلئے تمام معاملات طے پاگئے ہیں،قانونی پیچیدگیاں دور ہونے کے بعد نوازشریف اپنی صاحبزادی مریم نواز کے ہمراہ علاج کیلیے بیرون ملک جائیں گے۔

یاد رہے کہ نوازشریف 16 روز سروسز ہسپتال میں زیر علاج رہنے کے بعد گزشتہ روز جاتی امرا منتقل ہوئے جہاں شریف میڈیکل کمپلیکس کی جانب سے میڈیکل یونٹ لگایا گیاہے ۔ پاکستان مسلم لیگ(ن)کی ترجمان مریم اورنگزیب کا کہنا ہے کہ نواز شریف کی حالت تشویشناک ہے اور اب ان کے خون میں پلیٹ لیٹس کی تعداد مزید گھٹ گئی ہے۔سابق وزیراعظم نواز شریف کی صحت کے حوالے سے جاری کیے گئے بیان میں مریم اورنگزیب نے کہا کہ نواز شریف کے پلیٹ لیٹس مزید کم ہو گئے ہیں، ڈاکٹروں کے مطابق نواز شریف کی حالت تشویشناک ہے،پاکستان میں دستیاب ہرممکن علاج کیا جا رہا ہے مگر پلیٹ لیٹس مستحکم نہیں ہو رہے، نوازشریف کی صحت کے لیے ڈاکٹروں کے بورڈ کا ہنگامی اجلاس جاری ہے۔لاہور ہائیکورٹ نے نوازشریف کی چوہدری شوگر ملز کیس میں نوازشریف کی ضمانت منظور کر لی تھی جبکہ العزیزیہ ریفرنس میں بھی نوازشریف کا اسلام آباد ہائیکورٹ نے طبی بنیادوں پر 8 ہفتے کی ضمانت پر رہاکر نے کا حکم جاری کیا تھا۔ ذرائع نے بتایا کہ رانا ثنااللہ بھی جلد ضمانت پر رہا ہو جائیں گے۔ مخصوص لوگوں سے رابطوں میں میاں شہباز شریف اور انکی دوسری اہلیہ تہمینہ درانی نے اہم کردار ادا کیا ہے۔

مزید : قومی


loading...