ڈہرکی، باراتیوں کو گاڑی نے کچل ڈالا، خاتون جاں بحق

ڈہرکی، باراتیوں کو گاڑی نے کچل ڈالا، خاتون جاں بحق

  

ڈہرکی (نامہ نگار)ڈہرکی  نشے میں دھت نوجوان نے باراتیوں پر گاڑی چڑھا دی، ایک خاتون جاں بحق معصوم بچوں اور خواتین سمیت 6 زخمی ہوگئیں۔ تفصیلات کے(بقیہ نمبر29صفحہ6پر)

 مطابق ڈہرکی میں گزشتہ رات دیر سے گلاب شاہ کالونی میں میر زمان مغل اور عجب مغل کی شادی تقریب میں مہندی کی رسم ادا کرنے کے بعد واپسی کے دوران دیوالی کے موقع پر نشے میں دھت ھندو نوجوان سندیش کمار ولد بیشم باراتیوں پر گاڑی چڑھا دی، جس کے نتیجے میں دولھے کی بہن نورین مغل زوجہ برکت مغل، تہمینہ، شاہین سمیت چھ خواتین اور بچے زخمی ہوگئے، جن کو ڈہرکی کی سول ہسپتال منتقل کیا گیا، زخمیوں میں سے نورین، تہمینہ اور شاہین کی حالت انتہائی تشویشناک تھی جن کو رحیمیارخان منتقل کیا گیا، نورین مغل ہسپتال پہنچنے سے پہلے دم توڑ گئی جبکہ شدید زخمی بچیوں کی شیخ زیدہسپتال رحیمیار خان منتقل کیا گیا واقع میں ملوث ملزم سندیپ کمار کار سمیت موقع سے فرار ہوگیا، ملزم کی عدم گرفتاری پر ورثا نے لاش کو تھانے کے اندر رکھ کر سات گھنٹے تک دہرنا دیا گیاجبکہ سیاسی شخصیات اور علاقے کیکچھ بااثر بااثر افراد ملزم کو بچانے کے لئے سرگرم ہوگئے اور ورثا کو جھوٹی تسلیاں دے کر دہرنا ختم کرانے کے لئے کوشش کرتے رہے لیکن ورثا نے دہرنا ختم کرنے سے صاف انکار کردیا، پولیس مجبور ہوکر سندیش کمار کو گرفتار کر لیا، ملزم کی گرفتاری کے بعد ایس ایچ او اطہر چنہ نے مقدمہ درج کرنے سے  انکار کیا جس  کے بعد ورثا ایک بار پھر تھانے پہنچ کر دہرنا دیا جس کے بعد ڈہرکی پولیس نے محبوب مغل کی مدعیت میں ہندو نوجوان سندیش کمار اور دو نامعلوم افراد سمیت تین ملزمان کے خلاف مقدمہ درج کرلیا ہے، دوسری جانب شادی کی خوشیاں ماتم میں بدل گئی لاش گھر پہنچے پر قہرام مچ گیا

براتیوں 

مزید :

ملتان صفحہ آخر -