سندھ کی چینی بلوچستان کی ضرورت پوری کرتی ہے:سعید غنی

سندھ کی چینی بلوچستان کی ضرورت پوری کرتی ہے:سعید غنی

  

  کراچی(اسٹاف رپورٹر)وزیر اطلاعات سندھ سعید غنی نے کہا ہے کہ سندھ کی چینی سندھ کے ساتھ بلوچستان کی ضرورت پوری کرتی ہے۔انہوں نے پریس کانفرنس میں کہا کہ سندھ میں گنے کی کرشنگ شروع ہونے والی ہے، سندھ کی چینی سندھ کے ساتھ بلوچستان کی ضرورت پوری کرتی ہے۔سعید غنی نے کہا کہ ایک نئے ترجمان آئے ہیں جو کہتے ہیں سندھ ہم سے چینی نہیں مانگ رہا۔انہوں نے کہا کہ حکومت نے اگست سے نومبر تک چینی کی کمی کو دور کرنے کے لئے کچھ نہیں کیا، کہا جاتا ہے زرداری صاحب کی شوگرملیں ہیں، سندھ میں ایک شوگر مل بھی زرداری صاحب کی نہیں۔صوبائی وزیر نے کہا کہ سندھ میں پی ٹی آئی رہنما اور چوہدری برادران کی شوگر ملیں ہیں،  اومنی گروپ ہمارے کھاتے میں ڈالا جاتا ہے اس کے اکاونٹ توبند ہیں، اومنی گروپ بند ہونے سے 4 لاکھ ٹن چینی کم بن رہی ہے۔سعید غنی نے سوال کیا کہ یہ چینی جو کم بن رہی ہے اس کی ذمہ داری کس کے سر ہے؟  یہ جو صورتحال بن رہی ہے وہ عمران خان کی نا اہلی کی وجہ سے ہے۔انہوں نے کہا کہ پی ٹی آئی حکومت کے آتے وقت چینی 50 روپے فی کلو تھی اب 150 روپے سے زائد ہے،  پی ٹی آئی کہتی ہے چینی کی بڑھتی قیمت کی ذمہ دار سندھ حکومت ہے، گندم کے بحران کا ذمہ دار بھی سندھ حکومت کوکہا گیا تھا، گیس کی قلت کا ذمہ داربھی سندھ حکومت کو کہا گیا۔

مزید :

صفحہ اول -