”یہ آریان خان کو اغواءکر کے تاوان کی رقم لینا کا منصوبہ تھا اور “این سی بی کے افسرسمیر وانکھنڈے پر سنگین الزام لگا دیا گیا 

”یہ آریان خان کو اغواءکر کے تاوان کی رقم لینا کا منصوبہ تھا اور “این سی بی کے ...
”یہ آریان خان کو اغواءکر کے تاوان کی رقم لینا کا منصوبہ تھا اور “این سی بی کے افسرسمیر وانکھنڈے پر سنگین الزام لگا دیا گیا 

  

ممبئی (ڈیلی پاکستان آن لائن )مہاشٹرا کے وزیر نواب ملک نے ممبئی میں این سی بی زونل ڈائریکٹر سمیر وانکھنڈے پر الزام عائد کرتے ہوئے کہاہے کہ وہ آریان خان کے اغواءکے منصوبے کا حصہ تھے ۔

ٹائمز آف انڈیا  کے مطابق ممبئی میں رپورٹرز سے بات چیت کرتے ہوئے نواب ملک کا کہناتھا کہ بی جے پی کے لیڈر ’ موہت بھارتیہ اس منصوبے کے ماسٹر مائنڈ تھے ۔انہوں نے مزید کہا کہ وانکھنڈے نے بھارتیہ سے اوشی وارہ کے نواحی علاقے میں واقع قبرستان میں ملاقات کی تھی ۔ 

نواب ملک کی جانب سے منشیات کیس کو جعلی قرار دیتے ہوئے اسے قبل بھی سمیر وانکھنڈے پر سنگین الزامات عائد کیئے گئے تھے ۔ اب انہوں نے کہاہے کہ سمندری جہاز کی ٹکٹ آریان خان نے نہیں خریدی تھی بلکہ پراتک گبا اور عامر فرنیچر والا اسے جہاز پر لے گئے تھے ، یہ اغواءاور تاوان کا معاملہ ہے ، اس منصوبے کا ماسٹر مائنڈ موہت بھارتیہ ہے جو کہ تاوان کی مانگنے میں سمیر وانکھنڈے کا پارٹنر تھا ۔

ان کا کہناتھا کہ موہت اور بھارتیہ اوشی وارہ کے قبرستان میں سات اکتوبر کو ملے تھے ، جس کے بعد وانکھنڈے گھبرا گیا اور اس نے پولیس کو شکایت درج کی کہ اس کا پیچھا کیا جارہاہے ، وہ خوش قسمت تھا کہ قریبی سی سی ٹی وی کیمرہ نہیں چل رہا تھا اور ہمیں اس کی فوٹیج نہیں مل سکی ۔

نواب ملک کا بیان ایسے وقت میں سامنے آیاہے جب بی جے پی کے لیڈر موہت بھارتیہ نے دعویٰ کیا تھا کہ سنیل پاٹیل جس کا تعلق این سی پی لیڈرز کے ساتھ ہے ، مبینہ طور پر اس سنسنی کیس کا ماسٹرمائنڈ ہے ۔

موہت بھارتیہ نے بیان دیتے ہوئے کہا کہ سنیل پاٹیل جس کا تعلق دھولے سے ہے ، اس کے نیشنلسٹ کانگرس پارٹی کی اعلیٰ قیادت کے ساتھ قریبی تعلقات ہیں اور ان کا پہلے سے ریو پارٹی پر ہونے والی کا علم تھا ، جس پر بعدازاں این سی بی کے زونل ڈائریکٹر سمیر وانکھنڈے نے ریڈ ماری ۔

نواب ملک نے ان الزامات کو بے بنیاد قرار دیتے ہوئے کہا کہ یہ وانکھنڈے کی نجی فوج کی سچ سے توجہ ہٹانے کی ایک ناکام کوشش تھی ۔

مزید :

تفریح -