حکومت نے تعلیمی اداروں میں نشے کے کاروبار کیخلاف آپریشن کا فیصلہ کر لیا ، نگران وزیراعظم 

حکومت نے تعلیمی اداروں میں نشے کے کاروبار کیخلاف آپریشن کا فیصلہ کر لیا ، ...

  IOS Dailypakistan app Android Dailypakistan app

                                                                        اسلام آباد (آئی این پی)نگران وزیراعظم انوار الحق کاکڑ سے نگران وزیراعلی سندھ جسٹس ریٹائرڈ مقبول باقر نے ملاقات کی ہے ، ملاقات میں صوبے کے مختلف انتظامی امور اور امن و امان کی صورتحال پر تبادلہ خیال کیا گیا ، وزیر اعلی سندھ نے وزیراعظم کو صوبے میں نگران حکومت کی جانب سے عوامی فلاح کیلئے اٹھائے گئے مختلف اقدامات سے آگاہ کیا،ملاقات میں سندھ میں سمگلنگ اور بجلی چوری کی روک تھام کے حوالے سے اقدامات پر بھی گفتگو کی گئی، وزیراعظم نے وزیر اعلی سندھ کی قیادت میں صوبے کے انتظامی امور کے حوالے سے مثبت پیشرفت پر حکومت کی کوششوں کو سراہا۔نگران وزیر اعظم انوار الحق کاکڑ اقتصادی تعاون تنظیم کے سربراہی اجلاس میں شرکت کریں گے،ذرائع کے مطابق نگران وزیر اعظم انوار الحق کاکڑ بدھ کو ازبکستان کے تین روزہ دورے پر روانہ ہوں گے ، سربراہی اجلاس 8اور 9نومبر کو ازبکستان کے دارالحکومت تاشقند میں ہوگا۔ سمٹ میں اقتصادی تعاون تنظیم کے رکن کے ممالک کے سربراہان شرکت کریں گے ، انوار الحق کاکڑ تیسرے اقتصادی تعاون تنظیم سمٹ میں شرکت اور خطاب کریں گے ۔ نگران وزیر اعظم کی ازبکستان کے صدر شوکت میرزیوف سے ملاقات ہوگی جبکہ وزیراعظم تنظیم کے رکن ممالک کے سربراہان، بزنس کمیونٹی سے بھی ملاقاتیں کریں گے،نگران وزیر اعظم کی ترکی، ایران، ازبکستان، تاجکستان اور افغانستان کے رہنماﺅں سے بھی ملاقاتیں شیڈول ہیں ۔نگران وزیراعظم انوارالحق نے سکھ یاتریوں کو ہر قسم کی سہولتیں فراہم کرنے کی ہدایت کردی۔نگران وزیراعظم انوارالحق کاکڑ کے زیر صدارت سکھ یاتریوں کو پاکستان کی جانب سے فراہم ویزا سہولیات کا جائزہ اجلاس ہوا، نگران وزیراعظم کو سال بھرمیں منعقد ہونے والے مختلف تہواروں پر تفصیلی بریفنگ دی گئی۔انوارالحق کاکڑ نے کہا کہ دنیا بھر سے آئے سکھ یاتری ہمارے مہمان ہیں، سکھ یاتریوں کو ہر قسم کی سہولتیں فراہم کرنا ہماری ترجیح ہے، سکھ یاتریوں کو ویزا کی فراہمی کے عمل کو مزید تیز اور شفاف بنایا جائے، کرتارپور میں سکھ یاتریوں کو بین الاقوامی معیار کی سہولیات کی فراہمی یقینی بنائی جائے۔وفاقی حکومت نے تعلیمی اداروں میں نشے کے کاروبار کیخلاف آپریشن کا فیصلہ کیا ہے ۔ نگران وزیراعظم انوار الحق کاکڑ کی زیر صدارت تعلیمی اداروں میں منشیات کے استعمال سے متعلق اجلاس منعقد ہوا ۔اجلاس میں نگران وزیر داخلہ سرفراز بگٹی اور اسلام آباد انتظامیہ حکام نے شرکت کی ۔اجلاس میں تعلیمی اداروں میں منشیات کے استعمال کو جڑ سے اکھاڑ پھینکنے کے لیے ہنگامی اقدامات کا فیصلہ کیا گیا ہے ۔تعلیمی اداروں میں منشیات کے کاروبار کے خلاف آپریشن کیا جائےگا۔ نگران وزیر اعظم انوارالحق کاکڑ نے سماجی رابطوں کی ویب سائٹ ایکس پر اپنے بیان میں کہا ہے کہ وزارت داخلہ، اسلام آباد کی انتظامیہ اور آئی جی اسلام آباد سے میٹنگ ہوئی ہے ۔تعلیمی اداروں میں نشے کے کاروبار کو جڑ سے اکھاڑ پھینکنے کے لئے آپریشن کی نگرانی نگران وزیر داخلہ سرفراز بکٹی ذاتی طور پر کریں گے ۔ نگران وزیر اعظم نے کہا منشیات فروش ہماری نوجوان نسل اور پاکستان کے مستقبل کی تباہی کے درپے ہیں۔ان سے کوئی رعایت نہیں برتی جائے گی

نگران وزیر اعظم

مزید :

صفحہ اول -