جرمنی شام میں خانہ جنگی کے خاتمے میں کردار ادا کر سکتا ہے، بشار الاسد

جرمنی شام میں خانہ جنگی کے خاتمے میں کردار ادا کر سکتا ہے، بشار الاسد

دمشق(این این آئی) شام کے صدر بشار الاسد نے کہا ہے کہ باغیوں سے مذاکرات نہیں کئے جائینگے ۔جرمن میڈیا سے بات چیت کرتے ہوئے کہا ہے کہ جب تک باغی ہتھیار پھینک کر غیر مسلح نہیں ہوجاتے ان سے کسی نوعیت کے مذاکرات نہیں کئے جائیں گے۔ انہوں نے کہا کہ روس ان کا مستقل اتحادی رہے گا۔صدر اسد نے کہا کہ وہ نہیں سمجھتے کہ مذاکرات سے شام میں جاری تنازع کو حل کیا جا سکتا ہے۔ انہوں نے کہا کہ مغربی طاقتیں معاملے کو مذاکرات سے حل کرنا چاہتی ہیں۔ صدر اسد نے کہا کہ اس کے خیال میں حزب اختلاف کو اسلحہ نہیں اٹھانا چایئے تھا۔ انہوں نے کہاکہ کوئی ہتھیار پھینکتا ہے توان سے بات چیت ہو سکتی ہے۔ انہوں نے واضح کیا کہ بات صرف ان باغیوں سے ہوگی جو ملک میں امن چاہتے ہیں۔بشارالاسد نے امکان ظاہر کیا کہ جرمنی شام میں تیس ماہ سے جاری خانہ جنگی کے خاتمے میں کردار ادا کر سکتا ہے-اگر جرمنی کے مندوبین شام آئیں گے تو ہمیں خوشی ہو گی۔

 انہوں نے ایک بار پھر تردید کی کہ سرکاری فوج نے کیمیائی ہتھیار استعمال کئے ہیں انہوں نے اس کا الزام باغیوں پر عائد کیا-انہوں نے کہا کہ امریکی صدر بارک اوباما کے پاس ذرا بھر بھی ثبوت نہیں کہ شامی حکومت نے کیمیائی ہتھیار استعمال کئے ہیں امریکی صدر کے پاس جھوٹ کے سوا کچھ نہیں-

مزید : عالمی منظر