کینیا ¾حکام نے شاپ مال پر حملے میں ملوث چار افراد کے نام افشا کر دیئے

کینیا ¾حکام نے شاپ مال پر حملے میں ملوث چار افراد کے نام افشا کر دیئے

 نیروبی (این این آئی)کینیا میںحکام نے شاپ مال پر حملے میں ملوث چار افراد کے نام افشا کر دیئے ہیں کینیا میں فوجی حکام کے مطابق سی سی ٹی وی کی سامنے آنے والے نئے فوٹیج میں دکھائی دینے والے ابو برا السوڈانی، عمر نبھان، خطاب الکینی اور عمیر نامی مشتبہ حملہ آوروں کو کارروائی کے دوران ہلاک کیا گیا۔میڈیا رپورٹ کے مطابق جب ان چار حملہ آوروں کا اسلحہ لیے شاپنگ مال میں خاموشی سے ایک کمرے سے گزرنے کی سی سی ٹی وی فوٹیج نشر کی گئی تو ان کے نام بھی افشا کیے گئے۔کینیا کے فوج کے ترجمان میجر امینئل چیرچیر نے بتایا کہ میں اس بات کی تصدیق کرتا ہے کہ یہ دہشت گرد تھے جو کارروائی کے دوران ہلاک ہوئے۔انھوں نے کہا کہ سوڈان سے تعلق رکھنے والے السوڈانی ایک تجربہ کار جنگجو تھے جن کے بارے میں خیال کیا جاتا ہے کہ وہ اس گروپ کے سرغنہ تھے۔میجر امینئل نے کہا کہ نبھان عرب نژاد کینیائی تھا الکینی کا تعلق صومالیہ سے تھا جن کے الشباب کے ساتھ رابطے تھے۔ انھوں نے کہا کہ عمیر کے بارے میں مزید تفصیلات سامنے نہیں آئیں ہیں۔کینیا کے پولیس کےسربراہ نے کینیا کی کے ٹی ن ٹی وی کو بتایا کہ اب یقین کیا جاتا کہ اس حملے میں دس سے پندرہ نہیں بلکہ چار سے چھ حملہ آور شریک تھے۔

انھوں نے کہا کہ حملے کے بعد ان میں کوئی بھی عمارت سے بچ نکلنے میں کامیاب نہیں ہو سکا۔انھو نے کہا کہ حکام کو مطلوب خاتون سمانتھا لیوتھویٹ اس حملے میں ملوث نہیں تھیں۔ہم نے اس بات کی تصدیق کی ہے کہ حملہ آوروں میں کوئی خاتون شامل نہیں تھی۔واضح رہے کہ کینیا نے اس سے پہلے کہا تھا کہ اس حملے میں دس سے پندرہ حملہ آور ملوث تھے تاہم اب پولیس کے سربراہ کا کہنا ہے کہ ان حملہ آوروں کی تعداد چار سے چھ ہو سکتی ہے۔القاعدہ سے منسلق الشباب کا کہنا تھا کہ یہ حملہ صومالیہ میں کینیا کی فوجی مداخلت کے ردِ عمل میں کیا گیا تھا۔

مزید : عالمی منظر