پاکستان پر بھارت کا دہشتگردی کا الزام ، کیمپ ختم ہونے تک مذاکرات کا عمل آگے بڑھناممکن نہیں: پرناب مکھرجی

پاکستان پر بھارت کا دہشتگردی کا الزام ، کیمپ ختم ہونے تک مذاکرات کا عمل آگے ...
پاکستان پر بھارت کا دہشتگردی کا الزام ، کیمپ ختم ہونے تک مذاکرات کا عمل آگے بڑھناممکن نہیں: پرناب مکھرجی

  

استنبول(مانیٹرنگ ڈیسک)بھارت کے صدر پرناب مکھرجی نے کہا ہے کہ پاکستان جب تک اپنی سر زمین پر دہشت گردوں کے کیمپ اور دہشت گردی کا انفراسٹرکچر ختم نہیں کرتا تب تک اس کے ساتھ جامع مذاکرات میں پیش رفت ممکن نہیں، پاکستان دہشت گردی انفراسٹرکچر کے خاتمے کے حوالے سے بھارت کے ساتھ کیے گئے وعدوں کی پاسداری کرے، توقع ہے نواز شریف من موہن کے ساتھ کیے گئے وعدے پورے کریں گے، موجودہ ماحول میں پاکستان کے ساتھ مذاکرات آگے بڑھنا مشکل ہیں، ترکی کے معروف اخبارات اور ٹی وی چینلز کو انٹرویو میں پرناب مکھرجی نے ایک مرتبہ پھر پاکستان پر سرحد پار دہشت گردوں کی حمایت کا الزام عائد کرتے ہوئے کہا کہ جب تک پاکستان اپنی سر زمین پر دہشت گردوں کے کیمپ اور انفراسٹرکچر کو ختم نہیں کرتا ہے اس وقت تک دونوں کے درمیان مذاکرات میں کسی پیش رفت کا امکان نہیں۔ بھارتی صدر نے کہا کہ جب تک دہشت گردی اور خوف کا ماحول پیدا کیا جاتا رہا تو اس صورت میں آپ مذاکرات میں دوسرے نئے امور پر کیا بات کریں گے۔ ہم توقع کرتے ہیں کہ میاں نواز شریف نے بھارتی وزیر اعظم سے انفراسٹرکچر کے خاتمے کے حوالے سے وعدوں پر عملدرآمد کریں گے۔ انہوں نے کہا کہ پاکستان کی جانب سے اس معاملے پر سنجیدہ کوششوں کی ضرورت ہے کیونکہ بھارت کے خلاف زیادہ تر دہشت گردی کی کارروائیاں پاکستان کے زیر کنٹرول علاقوں سے ہوتی ہیں۔ اصل لائن آف کنٹرول ہے جہاں سیز فائر کا معاہدہ ہے، اس کی اکثر خلاف ورزی کی جاتی ہے۔ بھارتی صدر نے کہا کہ شملہ معاہدہ وہی ٹائم فریم ہے جس کے تخت ہم تمام مسائل مذاکرات کے حل کر سکتے ہیں تاہم اس کے لیے امن ضروری ہے ۔ہماری پاکستان سے اپیل ہے کہ وہ دہشت گردوں کو بھارت مخالف سرگرمیوں کے لیے اپنی سرزمین استعمال نہ کر نے دے اور اس سلسلے میں سنجیدہ اقدامات اٹھائے۔بھارتی صدر نے کہا کہ پاکستان کے یہ بھی وعدہ کیا تھا کہ وہ ممبئی حملوں کے ذمہ داروں کو انصاف کے کٹہرے میں لائے گا۔ ہم مطالبہ کرتے ہیں کہ وہ اپنا یہ وعدہ بھی پورا کرے۔

مزید : بین الاقوامی /اہم خبریں