نوبل پرائز برائے میڈیسن کیلئے نامزدگیوں کا اعلان کردیاگیا

نوبل پرائز برائے میڈیسن کیلئے نامزدگیوں کا اعلان کردیاگیا
نوبل پرائز برائے میڈیسن کیلئے نامزدگیوں کا اعلان کردیاگیا

  

سٹاک ہوم (مانیٹرنگ ڈیسک) نوبل پرائز برائے میڈیسن 2014ءکے لیے ناموں کا اعلان کردیاہے ۔ سٹاک ہوم سے جاری اعلامیہ کے مطابق اس سال ایوارڈ جان اوکیف ، مے برٹ موسراور ایڈورڈ موسر کو مشترکہ طور پر دیا جائے گا جنہوں نے دماغ کے پوزیشننگ سسٹم کے خلیوں کو دریافت کیا۔

تفصیلات کے مطابق جان او کیف نے 1971ءمیں ان خلیوں کو پہلی بار دریافت کیا جبکہ مے برٹ اور ایڈورڈ موسر نے 2005ءمیں ان خلیوں پر تحقیق کو وسعت دی۔ اس تحقیق کی وجہ سے سائنس دانوں کو یہ معلوم ہوا کہ انسانی دماغ نقشہ کیسے بناتا ہے اور پیچیدہ صورت حال میں راہوں کو کیسے تلاش کرتا ہے۔ اس انعام کے ساتھ ان تینوں محققین کو تقریباً 8 لاکھ 70 ہزار یورو کے برابر کی رقم بھی دی جائے گی۔ طب کے نوبل انعام کے حقدار ان سائنسدانوں کی تحقیق کا حوالہ چوہے تھے جس سے یہ معلوم ہوا کہ چوہوں اور انسانوں کا دماغی نظام ایک سا ہے۔ ان کی اس تحقیق سے یہ ثابت ہوا کہ کس طرح دماغی خلیے ایک ساتھ کام کرتے ہیں اور دماغ کی ”پوزیشننگ“ کا تعین کرتے ہیں۔ نوبل کمیٹی کا کہنا ہے کہ اس سے یاداشت کھو جانے کے عمل کو سمجھنے میں مدد ملے گی۔ 75سالہ او کیف کا تعلق برطانیہ کے یونیورسٹی کالج لندن سے ہے۔انہوں نے اپنی تحقیق کے ذریعے معلوم کیا کہ ایک خاص طرح کا دماغی خلیہ ہمیشہ اس وقت متحرک ہو جاتا ہے جب چوہا کمرے کی ایک مخصوص جگہ پر ہوتا ہے۔ اس تجربے سے یہ ثابت ہوا کہ چوہے کے دماغ میں ”پلیس سیلز“ اپنے اردگرد کی صورتحال کا صرف بصری خاکہ اخذ نہیں کرتے بلکہ وہ اس کا ایک نقشہ بنا لیتے ہیں۔ 34 سال کے بعد موزر جوڑے نے ایک نئے دماغی خلیے کی دریافت کی جسے ”گرِڈ سیل“ کا نام دیا گیا۔ یہ جوڑا نارویجیئن یونیورسٹی آف سائنس اینڈ ٹیکنالوجی میں پڑھاتا ہے۔ ان سائنسدانوں نے اپنی تحقیق سے یہ معلوم کیا کہ ”گرڈ سیل“ حرکت اور جگہ کے تعین کا ایک مربوط نظام پیدا کرتا ہے۔ اسی ہفتے منگل اور بدھ کو طبیعات اور کیمیا کے شعبوں میں نمایاں کارکردگی دکھانے والوں کے ناموں کا اعلان کیا جائے گا جبکہ نوبل انعام دینے کے لئے باقاعدہ تقریب دس دسمبر کو منعقد ہوگی۔

مزید : بین الاقوامی