بار بی کیو کھانے کے شائقین کیلئے تشویشناک خبر، آگ پر بھناگوشت کینسر کا باعث ہوسکتاہے: تحقیق

بار بی کیو کھانے کے شائقین کیلئے تشویشناک خبر، آگ پر بھناگوشت کینسر کا باعث ...
بار بی کیو کھانے کے شائقین کیلئے تشویشناک خبر، آگ پر بھناگوشت کینسر کا باعث ہوسکتاہے: تحقیق

  

وینکوور(مانیٹرنگ ڈیسک) دنیا میں نت نئی ایجادات سے مستفید ہونے کے ساتھ ساتھ انسان نے کھانے پکانے کے بھی نئے نئے طریقے ایجادکرلیے ہیں اور مختلف ذائقے بھی توجہ کا مرکزرہے ہیں لیکن ایک تحقیق سے معلوم ہواہے کہ باربی کیو کے شائقین کو کینسر جیسی خطرناک بیماری کا سامنا ہوسکتاہے ۔

کینیڈا میں ہونے والی کانفرنس میں ڈاکٹروں نے واضح کردیا ہے کہ مصالحوں سے مزین گوشت کو جب براہ راست آگ پر بھنا جاتا ہے تو وہ کینسر جیسی خطرناک بیماری کا باعث بن جاتا ہے اورایسے گوشت میں کینسر پیدا کرنے والے کارسینوجیز شراب اور سگریٹ سے بھی زیادہ تیزی سے بڑھتے ہیں۔

کینیڈین ڈاکٹر ایس ایم چندرا موہن کا کہنا ہے کہ تحقیق کے دوران 101 کیسنر کے مریضوں اور صحت مند افراد سے ان کے کھانے کی عادات پر ایک جیسے سوالات کئے گئے، سروے سے یہ بات سامنے آئی کہ براہ راست آگ پر بھنا ہوا گوشت کھانے والوں میں کینسر کی بیماری کے پیدا ہونے کا خطرہ ان لوگوں کے مقابلے میں 9 گنا زیادہ ہوتا ہے جو یہ گوشت نہیں کھاتے ہیں جبکہ سگریٹ پینے والوں میں 8 گنا جبکہ شراب پینے والوں میں کینسر کی بیماری کے خدشات 4 گنا زیادہ ہوتے ہیں۔

امریکہ کا نیشنل کینسر انسٹی ٹیوٹ نے اپنی تحقیق میں واضح کردیا تھا کہ بار بی کیو یا گرلڈ گوشت کینسر کا باعث بنتا ہے۔ تحقیق میں بتایا گیا تھا کہ جب گوشت کو بھوننے کے لیے گیس یا کوئلہ کا استعمال کیا جاتا ہے تو اس سے نکلنے والا کیمیکل ” پولی سائیکلک ایرومیٹک ہائیڈرو کاربن “(پی اے ایچ) گوشت کے ساتھ چمٹ جاتے ہیں، لیبارٹری ٹیسٹ نے ثابت کیا ہے کہ یہ مرکب کینسر کا باعث بنتا ہے۔

مزید : تعلیم و صحت