بھارت کی فضائیہ کو مودی نے خود ہی ڈبونے کا فیصلہ کر دیا، افسران پریشان

بھارت کی فضائیہ کو مودی نے خود ہی ڈبونے کا فیصلہ کر دیا، افسران پریشان
بھارت کی فضائیہ کو مودی نے خود ہی ڈبونے کا فیصلہ کر دیا، افسران پریشان

  

نئی دلی (نیوز ڈیسک) بھارت گزشتہ 32 سال سے ایک جنگی طیارہ بنانے کی کوشش میں ہے، جو ابھی تک قابل بھروسہ معیار حاصل نہیں کرپایا، لیکن وزیراعظم نریندر مودی نے بالآخر تنگ آکر حکم دے دیا ہے کہ بھارتی ائیرفورس یہی طیارہ استعمال کرے گی، اور باہر سے طیارے درآمد کرنے کی درخواست بھی رد کردی ہے۔

نامعلوم کالرز کی معلومات دینے والی حیران کن ایپ اردومیں بھی دستیاب

بھارتی دفاعی اداروں کی خواہش تھی کہ فرانسیسی کمپنی Dassault Aviation SA سے 36 جنگی طیارے خرید لئے جائیں، مگر وزیراعظم مودی کے فیصلے نے بھارتی فضائیہ پر گھبراہٹ طاری کردی ہے کیونکہ اس کے اعلیٰ حکام جانتے ہیں کہ جو طیارہ تین دہائیوں میں کسی قابل نہیں بن سکا وہ اعتماد کے قابل نہیں ہے اور بھارتی فضائیہ کیلئے خطرناک ثابت ہوسکتا ہے۔

بھارتی فضائیہ کا کہنا ہے کہ اسے چین اور پاکستان کے دوہرے خطرے کے مقابلے کیلئے 45فائٹر سکواڈرن کی ضرورت ہے، لیکن اس کے پاس صرف 35 ایکٹو سکواڈرن ہیں۔ صورتحال پہلے ہی اچھی نہیں اور ایسے میں اپنا ہی بنایا ہوا ’تیجس‘ طیارہ استعمال کرنے کا حکم دے دیا گیا ہے، جو کہ دفاع میں مدد دینے کی بجائے بھارتی فضائیہ کو اپنے لئے سب سے بڑا خطرہ نظر آ رہا ہے۔

سعودی عرب نے حج قوانین کی خلاف ورزیاں کرنے والوں کی سزا بتا دی

مزید :

ڈیلی بائیٹس -