بھارتی مظالم کو بے نقاب کرنے کیلئے مشن کشمیر کے نام سے سفارتی مہم حوصلہ افزاء ہے: سردار مسعود خان

بھارتی مظالم کو بے نقاب کرنے کیلئے مشن کشمیر کے نام سے سفارتی مہم حوصلہ افزاء ...

منگ ( اے این این )صدر آزاد کشمیر سردار مسعود خان نے کہا ہے کہ پاکستان نے عالمی سطح پر مسئلہ کشمیر اجاگر کرنے اور مقبوضہ کشمیر میں بھارتی جبر و استبداد کو بے نقاب کرنے کے لیے مشن کشمیر کے نام سے سفارتی مہم کا آغاز کردیا ٗ دنیا کے اہم 22 دارالحکومتوں کے لیے وزیراعظم میاں محمد نواز شریف نے اپنے خصوصی ایلچی بھیجنے کا فیصلہ کیا جو خوش آئند ہے ٗاسلا م آباد میں پارلیمانی جماعتوں کی کانفرنس کا انعقاد اور پارلیمنٹ کا مشترکہ اجلاس اس سلسلے کی کڑیاں ہیں ٗ کشمیر ی شہداء کا خون بہر صورت رنگ لا کر رہے گا ٗ بھارت کشمیر میں جاری آزادی کی تحریک کو دہشتگردی کا رنگ دینے کی کوششوں میں بری طرح ناکام ہو چکا ہے ۔ صدر آزاد کشمیر کی زیر صدارت آزاد کشمیر کے تاریخی مقام منگ میں آزادی کشمیر کانفرنس جمعرات کو منعقد ہوئی ۔ جمعیت علماء اسلام جموں و کشمیر کے زیر اہتمام کانفرنس سے صدر آزاد کشمیر کے علاوہ ، چیئرمین پارلیمانی کشمیر کمیٹی مولانا فضل الرحمان ،سابق صدر آزاد کشمیر سردار یعقوب خان ، آزاد کشمیر اسمبلی میں قائد حزب اختلاف چوہدری محمد یاسین ، کل جماعتی حریت کانفرنس کے رہنماؤں امیر جماعت اسلامی آزاد کشمیر اور رکن قانون اسمبلی عبدالرشید ترابی اور دیگر نے بھی خطاب کیا ۔ صدر سردار محمد مسعود خان نے اپنے خطاب میں کہا کہ مسئلہ کشمیر کے حل اور کشمیری قوم کے حق خود ارادیت کے لیے نیک نیتی سے کوششیں شروع کر دی گئی ہیں۔ پاکستان نے عالمی سطح پر مسئلہ کشمیر اجاگر کرنے اور مقبوضہ کشمیر میں بھارتی جبر و استبداد کو بے نقاب کرنے کے لیے مشن کشمیر کے نام سے سفارتی مہم کا آغاز کیا ہے ۔ دنیا کے اہم 22 دارلحکومتوں کے لیے وزیراعظم میاں محمد نواز شریف نے اپنے خصوصی ایلچی بھیجنے کا فیصلہ کیا ۔ جس کا ہم خیر مقدم کرتے ہیں۔ اسلا م آباد میں پارلیمانی جماعتوں کی کانفرنس کا انعقاد اور پارلیمنٹ کا مشترکہ اجلاس اس سلسلے کی کڑیاں ہیں۔ انشاء اللہ کشمیر ی شہداء کا خون بہر صورت رنگ لا کر رہے گا۔ بھارت کشمیر میں جاری آزادی کی تحریک کو دہشتگردی کا رنگ دینے کی کوششوں میں بری طرح ناکام ہو چکا ہے ۔ اسی ناکامی کی خفت مٹانے کے لیے وہ کبھی اڑی جیسے خود ساختہ واقعے کا ڈھونگ رچا تا ہے اور کبھی کنٹرول لائن سے ملحقہ شہری آبادیوں پر بلا اشتعال گولہ باری کرتا ہے ۔ صدر سردار محمد مسعود خان نے کہا کہ امریکی و ائٹ ہاؤس کی جانب سے پاکستان کے خلاف دہشتگردی کے الزامات پر مبنی درخواست کو مسترد کیا جانا پاکستان کی بڑی سفارتی کامیابی ہے ۔ میں حالیہ دورہ امریکا کے دوران وہاں امریکی حکام سے جو ملاقاتیں کی تھیں ان کے نتائج سامنے آئیں گے ۔ بھارت کو سفارتی سطح پر خفت کا مذید سامنا کرنا پڑے گا۔ انہوں نے کہا کہ مسئلہ کشمیر اقوام متحدہ کے ایجنڈے پر سب سے دیرینہ اور حل طلب تنازعہ ہے ۔ عالمی برادری کا فرض ہے کہ وہ عالمی انسانی حقوق اور اعلیٰ اخلاقی اصولوں کی روشنی میں مسئلہ کشمیر حل کروائے ۔ نہتے نوجوانوں کے قتل عام پر بھارت کو جوابدہ بنایا جائے ۔ انہوں نے کہا کہ مقبوضہ کشمیر میں قابض افواج کالے قوانین کی آر لے کر کشمیریوں کی نسل کشی کر رہی ہیں۔ لیکن انہیں پوچھنے والا کوئی نہیں ہے ۔ صدر آزاد کشمیر نے کہا کہ عالمی برادری نے اپنے سٹرٹیجک مفادات کے باعث کشمیر کے حوالے سے بے حسی کی ایک دیوار بنا رکھی ہے ۔ جہد مسلسل سے اس دیوار کی ایک ایک اینٹ اکھاڑ کر اسے گرانا ہو گا ۔ ہم بار بار اقوام متحدہ اور دیگر عالمی اداروں کا دروازہ کھٹکھٹائیں گے اور مقبوضہ کشمیر کے مظلوم بھائیوں کے لیے انصاف طلب کریں گے ۔ صدر آزاد کشمیر نے کہا کہ میں نے مسئلہ کشمیر کے حوالے سے چھ نکاتی ایجنڈا ترتیب دیا ہے ۔ جس میں کہا گیا ہے کہ سب سے پہلے ہم اپنی صفیں درست کریں گے ۔ آزاد کشمیر کے اندر اتحاد کی فضا پیدا کی جائے گی ۔ اور مقبوضہ کشمیر کی قیادت کے ساتھ رابطے مضبوط کریں گے ۔ ہم اپنے حلیفوں کی تعداد بڑھائیں گے ۔ بیرون ملک مقیم پاکستانیوں اور کشمیریوں کی خدمت حاصل کرتے ہوئے ان ممالک کے ایوانوں تک آواز پہنچائیں گے ۔ امریکا یورپ اور بین الاقوامی قانون کے داعی ممالک اور اداروں تک اپنی روداد لے کر جائیں گے ۔ ہندوستان کے اندر موجود سول سوسائٹی اور میڈیا کے ضمیر کو بھی جگائیں گے تاکہ وہ فوج اور حکومت کو ظلم سے باز رکھیں ۔ صدر آزاد کشمیر نے کہا کہ ہمیں حکومت پاکستان او ر اس کے تمام اداروں پر مکمل اعتماد ہے ۔

مزید : صفحہ آخر