الائیڈ بنک کا آن لائن سسٹم ہیک ‘ صارف کے اکاؤنٹ سے 2 لاکھ نکل گئے

الائیڈ بنک کا آن لائن سسٹم ہیک ‘ صارف کے اکاؤنٹ سے 2 لاکھ نکل گئے

ملتان(جنرل رپورٹر) ہیکرز نے صارفین کوبہترین سروس فراہم کرنے کے دعوے دار الائیڈبنک کے محفوظ ترین آن لائن سسٹم کو ناکارہ بنادیا‘صارف کا اکاؤنٹ ہیک کرکے 2لاکھ روپے سے زائد کی رقم ٹرانسفر کرلی اوربنک انتظامیہ لاعلم رہی اس ضمن میں الائیڈ بنک لمیٹڈ کینٹ برانچ کی (بقیہ نمبر33صفحہ12پر )

اکاؤنٹ ہولڈر وجیہہ زاہد نے ’’پاکستان‘‘کو بتایا کہ گزشتہ روز 12بجے دوپہر میرے اکاؤنٹ سے ایک لاکھ50ہزار روپے سٹینڈرڈ چارٹرز بنک چکوال کے اکاؤنٹ نمبر01183459001میں ٹرانسفر کئے گئے ٹرانزیکشن کا موبائل مسیج ملنے پر جیسے ہی الائیڈ بنک کی انتظامیہ سے رابطہ کیا تو انہوں نے چھان بین شروع کردی اتنی دیر میں دوسرا موبائل مسیج آگیا جس میں 52 ہزار 5 سو روپے اُسی بنک کے اکاؤنٹ نمبر 01705157101میں پھر سے ٹرانسفر کئے گئے تھے جب بنک انتظامیہ کو اس کی شکایت کی گئی تو ان کا کہنا تھا کہ ہمیں اس اکاؤنٹ ہیکنگ سسٹم بارے کوئی علم نہیں اور ہم اس پر کوئی کارروائی بھی نہیں کرسکتے ‘ملک کے اتنے بڑے بنک سے اکاؤنٹ ہیکنگ اور لاکھوں روپے ٹرانسفر کرنے والے کے بارے میں بنک انتظامیہ کی جانب سے اظہار لاعلمی باعث تشویش ہے ہیکرز نے 2لاکھ روپے ٹرانسفر کرکے بنک کے محفوظ آن لائن سسٹم پر سوالیہ نشان لگاتے ہوئے آئندہ کے لئے راستہ کھلنے کی نشاندہی بھی کردی ہے جس کے تحت مستقبل میں مذکورہ بنک کے آن لائن سسٹم کو باآسانی ہیک کرتے ہوئے کروڑوں روپے کی ٹرانزیکشن ممکن بنائی جاسکتی ہے اگر بنک انتظامیہ نے اس ہیکر کے خلاف بروقت کارروائی نہ کی تو دیگر صارفین کو بھی مستقبل میں اسی قسم کی پریشانی کا سامنا کرنا پڑسکتا ہے۔

مزید : ملتان صفحہ آخر