امام بارگاہ حیدریہ گلگشت8کنال پر محیط،ایک رات میں تعمیر کیا گیا

امام بارگاہ حیدریہ گلگشت8کنال پر محیط،ایک رات میں تعمیر کیا گیا

ملتان(جنرل رپورٹر)امام بارگاہ حیدریہ گلگشت کالونی8کنال پر محیط ہے جسے درجنوں لوگوں نے صرف ایک رات میں تعمیر کیا اس امام بارگاہ کے تمام معاملات انجمن حیدریہ کے ذمہ ہیں جس کے صدر اصغر عباس نقوی ہیں جو انجمن تحفظ عزاداری کے صدر بھی ہیں اس امام بارگاہ کو1968میں تعمیر کیا گیا (بقیہ نمبر36صفحہ7پر )

اس امام بارگاہ میں سالانہ مجالس عزا کا عشرہ یکم محرم الحرام سے شروع ہوتا ہے جو کہ 10محرم الحرام تک جاری رہتاہے سید ضیاء الحسن زیدی مجالس میں خطاب کرتے ہیں گزشتہ روز 4محرم الحرام کو مجلس کے بعد حضرت امام حسین کے سب سے چھوٹے بیٹے کا جھولا برآمد ہوا جبکہ7محرم الحرام کو شبیہ ذوالجناح کا جلوس برآمد ہوتا ہے اس امام بارگاہ کی یہ بھی خاصیت ہے کہ ملک کے معروف شعراء کرام اور علماء ذاکرین محرم الحرام کی مجالس پڑھ چکے ہیں اما م بارگاہ میں زائرین کے بیٹھنے کے لئے ایک بڑا ہال کمرہ جبکہ زیارت رکھنے کے لئے ایک چھوٹا کمرہ موجود ہے جس میں دور دور سے لوگ مجالس سننے کے لئے آتے ہیں محرم الحرام میں روزانہ3سے 4ہزار خواتین اس ہال کمرہ میں مجلس کرتی ہیں اور لنگر عام کا بھی اہتمام کیا جاتا ہے مجالس اور زیارت کے کمروں کی ذمہ داری محترمہ شائستہ نجم‘ گل زہرا‘ مہرین‘ شازیہ‘ مسرت‘ نرجس‘ باجی کربلائی‘ شاہدہ مجتبیٰ نے سنبھالی ہوئی ہے انجمن حیدریہ کے دیگر ممبران میں سید آغا حسین شاہ‘ شوکت نقوی‘ حیدر نقوی‘ مظاہر رضا نقوی‘ یحیےٰ مہدی‘ تابش‘ آفاق‘ افضال شاہ‘علمدار شاہ ودیگر ہیں۔

مزید : ملتان صفحہ آخر