چکوال،مخصوص بلدیاتی نشستوں کے الیکشن،ٹکٹ کیلئے لابنگ شروع

چکوال،مخصوص بلدیاتی نشستوں کے الیکشن،ٹکٹ کیلئے لابنگ شروع

چکوال(ڈسٹرکٹ رپورٹر)مخصوص نشستوں کا بلدیاتی شیڈول آتے ہی امیدواروں نے اراکین اسمبلی کے ڈیروں کا رخ کر لیا ہے اور ٹکٹ حاصل کرنے کیلئے اپنی لابنگ شروع کر دی ہے۔ ضلع کونسل چکوال کی 24مخصوص نشستوں پر 15نشستیں خواتین کی ہیں ، کاغذات نامزدگی 17,18 اکتوبر کو داخل کرایے جانے ہیں، مسلم لیگ ن کے پارلیمنٹرینز نے اپنے ناموں کو پہلے ہی حتمی شکل دے رکھی ہے مگر کیونکہ اب وہ پچھلے تمام کاغذات نامزدگی منسوخ کر دیے گئے ہیں اور کاغذات نامزدگی نئے سرے سے داخل ہونگے اور ویسے بھی سردار غلام عباس کی مسلم لیگ ن میں شمولیت کے بعد اب مخصوص امیدواروں کیلئے پارلیمنٹرینز کی ترجیحات بھی مختلف ہونگی۔ بہرحال سردار غلام عباس فیصلہ کن پوزیشن میں ہیں اور وہ پہلے ہی اپنی چار خواتین منتخب کروانے کی پوزیشن میں ہیں۔ ایک نشست مسلم لیگ ق اور ایک پاکستان تحریک انصاف حاصل کر سکتی ہے لہٰذا خواتین کی15میں سے 13نشستیں مسلم لیگ ن کی ہیں اور اب صورتحال اس وجہ سے دلچسپ ہے کہ سردار غلام عباس کے آنے سے تمام طریقہ کار اور اعداد و شمار کی صورتحال بھی بدل چکی ہے۔ چوہدری لیاقت علی خان اور ملک اسلم سیتھی سردار غلام عباس کے ساتھ الحاق کر کے اپنی ایک آدھ نشست میں اضافہ کر سکتے ہیں۔ بہرحال مخصوص نشستوں کے انتخابات میں چیئرمین ضلع کونسل چکوال کا واضح چہرہ اور خدوخال سامنے آجائیں گے۔ بہرحال مسلم لیگی چیئرمین وہی ہوگا جس کے پاس رائے ونڈ کا ٹکٹ ہوگا۔ ضلع کونسل چکوال میں صورتحال مکمل طور پر یکطرفہ ہے ،61ممبران مسلم لیگ ن کے پاس ہیں جبکہ پانچ پانچ مسلم لیگ ق اور پی ٹی آئی کے پاس ہیں۔ مخصوص نشستوں کے الیکشن میں مسلم لیگ ن کے پارلیمنٹرینز کے اندرونی اختلافات ایک دفعہ پھر کھل کرسامنے آنے کا امکان ہے۔

مزید : راولپنڈی صفحہ آخر