باجوڑ میں رہریلی دوائیوں کی فروخت میں اضافہ

باجوڑ میں رہریلی دوائیوں کی فروخت میں اضافہ

باجوڑ ایجنسی ( نمائندہ پاکستان)باجوڑ ایجنسی میں زہریلی دوائیوں کی سر عام فروخت سے جوانوں کی خود کشیوں میں اضافہ۔خار مشران کا آئندہ خودکشی کرنے والوں کے جنازوں میں شرکت نہ کرنے کا فیصلہ۔ پولٹیکل انتظامیہ زہریلی دوائیوں کے بغیر رجسٹریشن فروخت پر پابندی لگائے۔ عوامی حلقے تفصیلات کے مطابق باجوڑ ایجنسی میں گزشتہ کئی مہینوں سے جوانوں کی خودکشیوں میں اضافہ ہوا ہے جس نے ایجنسی کے والدین اور مشران کو تشویش اور حیرت میں ڈال دیا ہے ماہرین نفسیات اس کو بے روزگاری اور ناانصافی کا رد عمل کہلاتے ہیں لیکن ایجنسی میں عوامی حلقے اس بات پر تشویش کا اظہار کر رہے ہیں کہ اس قسم کی زہریلی دوائیاں ایجنسی کے ہر مارکیٹ میں سر عام فروخت ہو رہے ہیں جس کو جوان آسانی کیساتھ خرید کر استعمال کر تے ہیں دوسری طرف ایجنسی میں اس کی خرید و فروخت کیلئے کوئی مربوط نظام موجود نہیں ہے علاقے کے مشران نے محکمہ زراعت باجوڑ اور پولٹیکل ایجنٹ سے مطالبہ کیا ہے کہ اس قسم کے زہریلی دوائیوں کی سر عام فروخت پر پابندی لگائے اور اس کیلئے ایک قانون بھی مرتب کریں یاد رہے کہ خار مشران نے آئندہ خود کشی کرنے والے افراد کے جنازوں میں شرکت نہ کرنے کا فیصلہ کیا ہے۔

مزید : پشاورصفحہ آخر