دفتر میں کام کرنیوالی خاتون کو بوس نے ایساقابل اعتراض میسج بھیج دیا کہ گھبراکر خودکشی کرلی

دفتر میں کام کرنیوالی خاتون کو بوس نے ایساقابل اعتراض میسج بھیج دیا کہ ...
دفتر میں کام کرنیوالی خاتون کو بوس نے ایساقابل اعتراض میسج بھیج دیا کہ گھبراکر خودکشی کرلی

  

نئی دہلی (مانیٹرنگ ڈیسک) بھارت کے شہر پونے میں اپنے بوس کی طرف سے قابل اعتراض میسج ملنے کے اور ٹیلی فون کال کے بعد ہاﺅسنگ فائنانس کمپنی کی 32سالہ کریڈٹ منیجر نے خود کشی کرلی، پولیس نے مقدمہ درج کرکے فرار ملزم کی تلاش شروع کردی۔

مبینہ طورپر خودکشی کرنیوالی خاتون کے خاوند نے تھانہ راجے میںسورج بندیلے کیخلاف دائر درخواست میں موقف اپنایا کہ وہ پرائیویٹ فرم کیساتھ اسسٹنٹ سیلز منیجر کے طورپر کام کرتاہے اور حسب معمول اس دن بھی ساڑھے نو بجے صبح گھر سے نکلا، جب شام کو ساڑھے آٹھ بجے گھر پہنچاتو دروازہ اندر سے بند تھا، کوشش کے بعد دروازہ نہ کھلنے پر پڑوسیوں کی مدد سے دروازہ توڑدیا اور بیڈروم کے پنکھے سے بیوی کی لاش لٹکی پائی جس کے بعدکسی نے فوری پولیس کو اطلاع کردی۔

خاوند نے موقف اپنایاکہ ’ مقتولہ کا فون بیڈ پر پڑا تھا اور بندیلے مسلسل کال کررہاتھا، میں نے فون سنا اوراسے واقعے سے آگاہ کیا توفون بند کردیا، جب فون کی چھان بین کی تو پتہ چلاکہ بندیلے نے خاتون کو کئی گالم گلوچ پر مشتمل اور قابل اعتراض پیغامات بھیج رکھے ہیں، اس کے بعد دوسرا موبائل فون دیکھاتو ایک میسج یہ بھی تھا کہ وہ پارکنگ ایریا میں تھا اور اسے کئی مرتبہ کال کی ‘۔

ضرور پڑھیں: اسد عمر کی چھٹی

مرنیوالی خاتون ڈی ایچ ایف ایل کمپنی کی سیناپتی باپت روڈ پر موجود برانچ میں کام کرتی تھی جہاں بندیلے اس کا افسر تھا جبکہ مرنے سے ایک دن قبل خاتون نے اپنے خاوند کو کہاتھاکہ نفسیاتی تشدد کی وجہ سے نوکری چھوڑنے کا فیصلہ کرچکی ہے جبکہ خودکشی سے قبل ایک نوٹ بھی مبینہ طورپر لکھ کر چھوڑا گیا جس میں کہاگیاکہ میں اپنی وجہ سے خودکشی کررہی ہوں،میری فیملی یا رشتہ دار ذمہ دارنہیں اور نہ ہی انہیں دھمکایاجائے ۔

مزید : جرم و انصاف