ٹی بی کی تشخیص اور علاج معالجہ پر خصوصی توجہ دی جارہی ہے ، ڈاکٹر زرفشاں طاہر

ٹی بی کی تشخیص اور علاج معالجہ پر خصوصی توجہ دی جارہی ہے ، ڈاکٹر زرفشاں طاہر

لاہور(جنرل رپورٹر)حکومت کی ہدایت کے مطابق پنجاب ٹی بی کنٹرول پروگرام کے تحت بچو ں میں ٹی بی کے مرض کی روک تھام ، تشخیص و علاج پر خصوصی توجہ دی جارہی ہے ۔ٹیچنگ ہسپتالوں کے علاوہ ڈی ایچ کیو اور ٹی ایچ کیو ہسپتالوں و رورل ہیلتھ سنٹرز تک سہولیات کا دائرہ وسیع کردیاگیاہے ۔ہسپتالوں میں تعینات ہونے والے پیڈیا ٹریشنز کو ٹی بی کے مرض کی تشخیص و علاج کے لئے ٹریننگ کورسز باقاعدگی سے کرائے جاتے ہیں یہ ایک مسلسل عمل ہے ۔ان خیالات کااظہار پراونشل ڈائریکٹر پنجاب ٹی بی کنٹرول پروگرام ڈاکٹر زرفشاں طاہر نے کیا ۔ انہو ں نے مزید کہاکہ پاکستان پیڈیاٹرک ایسوسی ایشن کی مشاورت سے عالمی ادارہ صحت کی جانب سے فراہم کردہ لٹریچر او رمینوول کو بھی ضرورت کے مطابق اپ ڈیٹ کیاجاتا ہے جس سے بچوں کے علاج میں مدد ملتی ہے ۔ان کا کہنا تھا کہ پنجاب ٹی بی کنٹرول پروگرام میں ڈبلیو ایچ او کی سفارش کردہ جین ایکپسرٹ مشین بھی تمام ڈی ایچ کیو ہسپتالو ں میں مرض کی تشخیص کے لئے مہیا کی ہے اور بچو ں کے ٹیسٹ ترجیحی بنیادو ں پر کئے جارہے ہیں ۔ پروگرام ڈائریکٹر کا مزید کہنا تھا کہ مرض کو پھیلنے سے روکنے کے لئے جس گھر میں کوئی ٹی بی کا مریض ہوتا ہے تو اس کے گھر کے بچوں کو حفاظتی طور پر ادویات دی جاتی ہیں ۔

مینجر آپریشن ڈویلپمنٹ زبیر احمد نے بتایاکہ 2013 کے بعد صوبے کی ہیلتھ فسیلٹیز پر سہولیات میں نمایاں بہتری آئی ہے اور ان میں کئی گنا اضافہ ہوا ہے جس سے مریضوں کی تشخیص اور رجسٹریشن بھی بڑھ گئی ہے اور اب ٹی بی پروگرام معاشرے میں موجود نامعلوم مریضوں تک رسائی پر خصوصی توجہ دے رہاہے جس سے ٹی بی میں مبتلا بچوں کی تلاش اور رجسٹریشن میں بھی بہتری آئی ہے ۔ انہوں نے بتایاکہ 2017 میں 15634مریض بچے رجسٹرڈ کرکے علاج کی سہولت فراہم کی گئی ۔پروگرام ڈائریکٹر ڈاکٹر زرفشاں کا کہنا تھاکہ گلوبل فنڈ کے تعاون سے ٹی بی کے تمام رجسٹرڈ مریضوں کو ادویات فراہم کی جارہی ہیں اور حکومت کی نئی پالیسی کے تحت ٹی بی کے مریضوں کا ایڈ ٹیسٹ بھی شروع کردیاگیاہے ۔

Bac

مزید : میٹروپولیٹن 1


loading...