ٹرائبل یوتھ موومنٹ کا مطالبات کے حل کیلئے گورنر ہاؤس کے سامنے دھرنا

ٹرائبل یوتھ موومنٹ کا مطالبات کے حل کیلئے گورنر ہاؤس کے سامنے دھرنا

پشاور(سٹی رپورٹر)ٹرائبل یوتھ موؤمنٹ نے فاٹااصلاحات اورقبائلی اضلاع کے عوام کے حقوق کیلئے گورنرہاؤس پشاورکے سامنے احتجاجی دھرنادیااحتجاج دھرنا قیوم سٹیڈیم سے صدر روڈ پر ہوتا ہوا گورنرہاؤس پہنچ گیا جہاں پر قبائلی نوجوان جمع ہوگئے ، احتجاجی دھرنے کی قیادت موؤمنٹ کے صدر شوکت عزیز کررہے تھے۔گورنرخیبرپختونخواشاہ فرمان کیساتھ کامیاب مزکرات کے بعد دھرنا ختم کردیا۔اس موقع پرٹرائبل یوتھ مومنٹ نے میں دھرنے میں حکومت سے مطالبہ کیا تھا کہ فاٹا اصلاحات پر فوری طور رپر عمل درآمد کیاجائے قبائلی اضلاع میں صوبائی اور بلدیاتی انتخابات وقت پر کرائے جائے اور صوبائی اسمبلی کی مجوزہ16سیٹوں کے بجائے24سیٹس دی جائیں دھرنے سے خطاب میں شرکاء کاکہناتھاکہ قبائلی اضلاع میں سکولوں کی تعمیرپر لگائی گئی پابندی ہٹائی جائے اور وہاں اعلیٰ اور معیاری تعلیمی ادارے قائم کی جائے۔ قبائلی اضلاع کے معدنیات پرقبضہ مافیا اور غیرقانونی لیز پر ٹھیکے ختم کیا جائے فاٹا اصلاحاتی کمیٹی کا تجویز کردہ این ایف سی ایورڈ میں تین فیصد حصہ دیا جائے ان اکاکہناتھاکہ میڈیکل اور انجینئرنگ یونیورسٹیوں میں قبائلی طلبہ کیلئے کوٹہ ڈبل کیا جائے قبائلی اضلاع میں افغانستان کے ساتھ موجود تمام پوائنٹس کو دوطرفہ تجارت کیلئے کھولا جائے جبکہ ایف ڈی اے اور فاٹا سیکرٹریٹ کو صوبائی حکومت کے حوالے کیا جائے اور ماضی میں ہونے والے کرپشن کی تحقیقات کی جائے قبائلی اضلاع میں خالی آسامیوں کو مشتہر کرکے فوری طورپرقبائلی نوجوانوں کو بھرتی کیا جائے اور این جی اوز میں مقامی افراد بھرتی کرنے کیلئے منصوبہ بندی کی جائے ان اکاکہناتھاکہ آپریشنزسے متاثرہ گھروں کے دوبارہ سروے کی جائے اور معاوضہ بڑھایاجائے جبکہ لاپتہ افراد کے ورثاء کو انصاف دلانے کیلئے عدالتی کمیشن بنائے قبائلی اضلاع میں مؤثرعدالتی نظام قائم کیاجائے سالانہ طرقیاتی بجٹ فوری طورپر منظور کیا جائے۔

آخرمیں ٹرائبل یوتھ موؤمنٹ کے وفد کا گورنرخیبرپختونخوا کیساتھ کامیاب مذاکرات کے بعد دھرنا ختم کردیاگیا جس میں تین مطالبات فوری طورپرمانے گئے جس میں تمام قبائلی اضلاع کے نوجوانوں پرمشتمل25رکنی کمیٹی تشکیل دی جائیگی جو قبائلی اضلاع کے مسائل کے حل کیلئے تجاویز تیارکرکے گورنر خیبرپختونخوا کو پیس کرے گی اس کمیٹی میں قبائلی خواتین اور مرد نوجوان شامل ہونگے جو مہینے میں دو بار گورنر سے ملاقات کریگی اور مسائل کی حل کیلئے اقدامات اٹھائینگے ،گورنرخیبرپختونخواشاہ فرمان طلبہ کویقین دہانی کرائی کہ میڈیکل اور انجینئرنگ یونیورسٹیوں کے کوٹہ کو برقرار رکھنے کے ساتھ قبائلی طلبہ کو اوپن میرٹ پر بھی داخلے دی جائی گی ایف ڈی اے میں فوری طور پر کرپشن کی تحقیقات کی جائی گی اور ملوث افراد کے خلاف قانونی کاروئی کی جائی گی۔

مزید : علاقائی


loading...