شہباز کی گرفتاری سیاسی انتقام ،اثرات ریاستی نظام کیلئے نقصان دہ ہو سکتے ہیں ، مسلم لیگ (ن)

شہباز کی گرفتاری سیاسی انتقام ،اثرات ریاستی نظام کیلئے نقصان دہ ہو سکتے ہیں ...

 لاہور، اسلام آباد،شیخوپورہ ، کوئٹہ،حافظ آباد(لیڈی رپورٹر،آئی این پی،آن لائن) مسلم لیگ (ن)کی ترجمان مریم اورنگزیب نے کہا ہے کہ شہبازشریف کی گرفتاری سیاسی انتقام کی کڑی ہے،پی ٹی آئی اوچھے ہتھکنڈوں پراترآئی ہے،پنجاب میں خوشحالی پرشہباز شریف کو گرفتار کیا گیا، یہ شہراور اس صوبے کے ساتھ زیادتی ہے مخالفین ہمیں سیاست میں شکست نہیں دے سکے ۔خواجہ سعد رفیق نے کہا ہے کہ قائد حزب اختلاف کو گرفتار کروانے والوں نے پوری دنیا میں پاکستانی کی بے عزتی کروائی ہے۔تفصیلات کے مطابق سماجی رابطوں کی ویب سائیٹ ٹویٹر پر ٹویٹ کرتے ہوئے امیدوار این اے 131 و رہنما پاکستان مسلم لیگ ن خواجہ سعد رفیق نے کہاکہ اپوزیشن لیڈر و صدر ن لیگ شہباز شریف کی گرفتاری سوچی سمجھی سازش کے تحت ہوئی، اس ملک میں احتساب نہیں، احتساب کے نام پر انتقام لیا جا رہا ہے،وہ شہباز شریف جس نے پنجاب کو بدل ڈالا، جس کی تعمیر و ترقی کی مثالیں دنیا دیتی ہے۔سینئر رہنما سابق و فاقی وزیر چوہدری برجیس طاہر ایم این اے نے کہا کہ مسلم لیگ (ن) کے صدر سابق وزیر اعلی پنجاب میاں شہباز شریف کی گرفتاری کی مذمت کرتے ہوئے کہا ہے کہ عوام پر مسلط حکمران بد ترین انتقام کی راہ پر چل پڑے ہیں جس کی انتہا ملکی جمہوریت کے لئے تباہ کن ثابت ہونگی قوم کی خدمت کے لئے اپنی زندگی وقف کرنے والے پاکستان مسلم لیگ (ن) کے کارکنوں کی قیادت کے ساتھ بے لوث محبت کو زنجیریں نہیں پہنائی جا سکیں گی برجیس طاہر نے میاں محمد شہباز شریف کی گرفتاری کو پاکستان کی سیاست کا سیاہ ترین باب ہے جس کے اثرات ریاستی نظام کے لئے بھی نقصان دہ ثابت ہوسکتے ہیں ۔ سابق وزیر اعلی بلوچستان نے کہا ہے کہ ن لیگ کے رہنما ؤ ں اور کارکنان پر ایک تسلسل سے انتقامی کاروائیاں جاری ہیں مگر اس سے ہمارے حوصلے پست نہیں ہوں گے۔مسلم لیگ (ن) کے رہنما رانا ثناء اللہ نے کہا کہ شہباز شریف کی گرفتاری کے خلاف احتجاج کریں گے ، نیب موجودہ حکومت کا آلہ کار بنا ہو اہے ، نیب ایک روپے کی کرپشن کا الزام ثابت نہیں کر سکا۔ سابق وزیر مملکت سائرہ افضل تارڑ نے صدر پاکستان مسلم لیگ(ن)اور قومی اسمبلی میں قائد حزب اختلاف میاں شہباز شریف کی گرفتاری کی شدید الفاظ میں مذمت کرتے ہوئے کہاہے کہ پاکستان مسلم لیگ (ن)اب خاموش نہیں بیٹھے گی ‘ہمارے ساتھ جو کچھ بھی ہو رہا ہے سب سیاسی انتقام کی مد میں ہو رہا ہے۔مسلم لیگ ن کی خواتین اراکین نے کہا ہے کہ شہباز شریف کی گرفتاری ضمنی الیکشن کے خوف سے عمل میں آئی ہے،ان کی کی گرفتاری سیاسی انتقام ہے۔دھاندلی زدہ مینڈیٹ والی حکومت انتقامی کاروائیوں پر اتر آئی ہے۔حکومتی وزراء نیب کے ترجمان بننے ہوئے ہیں۔نیب کی تمام کاروائیاں صرف ن لیگ کیخلاف جاری ہیں ۔نیب کا قانون کالا قانون ہے جس کو ایک ڈکٹیٹر نے سیاستدانوں کیخلاف استعمال کیا اب ایک نام نہاد جمہوری حکومت اس ڈکٹیٹر کے راستے پر چل پڑی ہے۔ان خیالات کا اظہار مسلم لیگ ن کے رکن اسمبلی ودیگر خوا تین مر یم اورنگ زیب، شائستہ پرویز ، حنا پرویز ،عظمیٰ بخاری ، رخسا نہ کو ثر، نبیلہ یا سمین ،غزا لہ نصرت،نسیم با نو ،مہوش سلطانہ،ثانیہ عاشق،عنیزہ فاطمہ ،رابعہ فاروقی ،نرگس متین،بی بی وڈیری نے نیب عدالت کے باہر میڈیا سے گفتگو کرتے ہوئے کیا۔

مزید : صفحہ اول


loading...