طاقتور قبضہ مافیا کو کسی صورت نہیں چھوڑیں گے ، آپریشن کی نگرانی خود کررہا ہوں ، عثمان بزدار

طاقتور قبضہ مافیا کو کسی صورت نہیں چھوڑیں گے ، آپریشن کی نگرانی خود کررہا ہوں ...

 لاہور(جنرل رپورٹر) وزیراعلیٰ پنجاب سردارعثمان بزدارکی زیر صدارت اعلیٰ سطح کا اجلاس منعقد ہوا ،جس میں قبضہ مافیا او رتجاوزات کے خلاف جاری مہم پر ہونے والی پیشرفت کا جائزہ لیاگیا ۔وزیراعلیٰ کو بریفنگ کے دوران بتایا گیا کہ لاہور ڈویژن کے 4اضلاع میں 250ایکڑ سے زائد سرکاری اراضی پر قبضہ ختم کرایاگیااورواگزار کرائی گئی اراضی کی مالیت 7ارب روپے سے زائد ہے۔وزیراعلیٰ نے قبضہ مافیااور تجاوزات کے خلاف جاری مہم پر اطمینان کا اظہار کرتے ہوئے کہاکہ اربوں روپے کی سرکاری اراضی کو چند روز میں واگزار کرانا متعلقہ محکموں کی مربوط او رموثر کوآرڈینیشن کا نتیجہ ہے ۔وزیراعلیٰ نے ہدایت کی کہ قبضہ مافیااور تجاوزات کے خلاف موثر انداز میں آپریشن جاری رکھا جائے اور عام آدمی کو اس مہم میں تنگ نہ کیاجائے۔انہوں نے کہا کہ میں خود اس آپریشن کی نگرانی کر رہا ہوں۔طاقتور قبضہ مافیاکو کسی صورت نہیں چھوڑیں گے ۔اجلاس میں ہر ضلع میں انسداد تجاوزات سیل بنانے کا فیصلہ کیا گیا ۔وزیراعلیٰ نے کہاکہ یہ سیل ڈپٹی کمشنرزکے آفس میں قائم کئے جائیں گے۔متعلقہ محکموں کے نمائندے اور ڈپٹی کمشنر آفس کانمائندہ سیل کے ممبر ہوں گے۔ وزیراعلیٰ نے صوبائی وزیر ہاؤسنگ میاں محمود الرشیدکی سربراہی میں سٹیئرنگ کمیٹی تشکیل دینے کی ہدایت کی جو کہ تمام امور کاجائزہ لے گی اور اس بارے میں سفارشات پیش کرے گی۔سٹیئرنگ کمیٹی میں سینئر ممبر بورڈ آف ریونیو، متعلقہ محکموں کے سیکرٹریز اور انتظامی افسران شامل ہوں گے ۔ صوبائی وزیر ہاؤسنگ میاں محمودالرشید نے ا جلاس سے خطاب کرتے ہوئے کہاکہ عوام قبضہ مافیا کے بارے میں انسداد تجاوزات سیل کو اطلاع دیں اور مہم کو کا میاب ہونے تک جاری رکھا جائے گا۔صوبائی وزیر ہاؤسنگ میاں محمود الرشید ، متعلقہ محکموں کے سیکرٹریز ، کمشنر لاہور ڈویژن ، ڈی جی ایل ڈی اے ،سی سی پی او لاہور اور اعلی افسران نے اجلاس میں شرکت کی ۔دریں اثناء سردارعثمان بزدارنے کہا ہے کہ عوام کو بہترسہولتیں اورریلیف دینا ہماری بنیادی ذمہ داری ہے ۔تحریک انصاف کی پنجاب حکومت نے پرائیویٹ ہسپتالوں ،پرائیویٹ میڈیکل کالجوں اورنجی سکولوں کے امور میں بہتری لانے اورعام آدمی کوسہولتیں فراہم کرنے کے حوالے سے ٹاسک فورسز کا قیام عمل میں لانے کیلئے ہدایات جاری کردی ہیں اوران ٹاسک فورسز کے قیام کا بنیادی مقصدپرائیویٹ ہسپتالوں ،پرائیویٹ میڈیکل کالجوں اورنجی سکولوں میں سہولتوں کو بہتر بنا کر عوام کی زندگیوں میں بہتری لانا اوران کے لئے آسانیاں پیدا کرنا ہے۔وہ وزیراعلیٰ آفس میں مختلف وفود سے ملاقات کررہے تھے ،وزیراعلیٰ نے اس موقع پر لوگوں کے مسائل سنے اوران کے حل کیلئے موقع پر ہی احکامات جاری کیے۔وزیراعلیٰنے کہا کہ پرائیویٹ ہسپتالوں،پرائیویٹ کالجوں اورنجی سکولوں کو عوام کا استحصال کی اجازت نہیں دی جاسکتی ۔ پیشہ ورانہ کالجوں کیلئے انٹری ٹیسٹ کے بارے میں جلد تفصیلی بریفنگ لے کر فیصلہ کریں گے۔

مزید : صفحہ اول


loading...